خبرگزاری شبستان

سه شنبه ۲۴ تیر ۱۳۹۹

الثلاثاء ٢٤ ذو القعدة ١٤٤١

Tuesday, July 14, 2020

وقت :   Tuesday, January 27, 2015 خبر کوڈ : 5695

خطے کی مشکلات کی جڑفلسطین پرغٓاصبانہ قبضہ ہے:ڈاکٹرحسن روحانی
خبررساں ایجنسی شبستان:ایرانی صدرنے سرزمین فلسطین پرغاصبانہ قبضے کوخطے کی تمام مشکلات کی جڑاوربنیاد قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ اس وقت دنیا کے تمام لوگ صہیونی حکومت کے ظلم وستم کوبرداشت نہیں کرتے بلکہ ان کی مذمت کرتے ہیں۔

خبررساں ایجنسی شبستان نے ایرانی صدرکی سائٹ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ایرانی صدرحجۃ الاسلام ڈاکٹرحسن روحانی نے سوموار کے دن اردن کے نئے سفیرسے ملاقات کے دوران کہا ہے کہ مسلمانوں کے قبلہ اول کے عنوان سے  فلسطین اورمسجدالاقصیٰ پورے عالم اسلام میں بہت زیادہ اہمیت رکھتی ہے اوراس مسجد پرآہستہ آہستہ قبضے اورفلسطینیوں کوان کے ملک سے نکال باہرکرنے کے مسئلے نے تمام مسلمانوں کے ضمیروں کورنجیدہ خاطرکردیا ہوا ہے اورہم بیت المقدس پرغاصب صہیونی حکومت کے قبضے کوقبول نہیں کرتے ہیں۔

ڈٓاکٹر روحانی نے اردن کی جغرافیائی اہمیت اوراسی طرح خطے کے بعض ممالک میں موجود دہشتگردی اورعدم استحکام کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کا مقصد مشرق وسطیٰ میں پائیدارامن کا قیام ہے اور فلسطینیوں کی اپنے وطن میں واپسی کے ذریعے ہی مسئلہ فلسطین حل ہوسکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا ہے کہ اردن ایک بہت پرانا تمدن رکھتا ہے اوران دونوں ملتوں کے درمیان ہمیشہ سے اچھے تعلقات قائم رہے ہیں۔ لہذا ہم امید کرتے ہیں کہ تہران میں اردن کے نئے سفیر کی موجودگی سے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں مزید بہتری آئےگی۔

ایرانی صدر نے اس مطلب کہ خطے اوردونوں ممالک کے حالات تقاضا کرتےہیں کہ دونوں ممالک کواپنے  تعلقات کو مزید فروغ  دینا چاہیے، کی ضرورت پرزوردیتے ہوئے کہا ہے کہ ان دونوں ملکوں کا مشرق وسطیٰ جیسے اہم علاقے سے تعلق ہے لہذا ہمارے لیے سب سے اہم اس خطے کا استحکام ہے۔

اردن کے سفیر نے بھی اس ملاقات کے دوران اسلامی جمہوریہ ایران کو خطے کا ایک اہم اورموثرملک قراردیتےہوئے کہا ہے کہ ہم مختلف میدانوں میں ایران کےساتھ اپنے تعاون کوفروغ دینے کی کوشش کریں گے۔

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز

سماجی: اسلامی جمہوریہ ایران کے شہر بندرعباس میں 8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز ہوچکا ہے جس میں دنیا بھر سے مسلمان دانشور، علماء، مفکرین اور عمائدین شرکت کررہے ہیں۔

منتخب خبریں