خبرگزاری شبستان

دوشنبه ۲ اسفند ۱۳۹۵

الاثنين ٢٤ جمادى الأولى ١٤٣٨

Monday, February 20, 2017

وقت :   Sunday, February 28, 2016 خبر کوڈ : 62334

کتاب ﴿عصرغیبت میں داخل ہونے کےلیے امام باقر﴿ع﴾ اورامام صادق﴿ع﴾ کی سیاسی حکمت عملی﴾ کی اشاعت
خبررساں ایجنسی شبستان: حجة الاسلام سید ابراہیم معصومی کی کتاب عصرغیبت میں داخل ہونے کےلیے اسلامی معاشرے کو تیارکرنے میں امام باقر﴿ع﴾ اورامام صادق﴿ع﴾ کی سیاسی حکمت عملی، شائع ہوکرمنظرعام پرآگئی ہےکہ جسے آئندہ روشن نامی پبلیکشنز نےشائع کیا ہے۔

خبررساں ایجنسی شبستان کےنامہ نگارکی رپورٹ کےمطابق حجة الاسلام سید ابراہیم معصومی کی کتاب عصرغیبت میں داخل ہونے کےلیے اسلامی معاشرے کوتیارکرنے میں امام باقر﴿ع﴾ اورامام صادق﴿ع﴾ کی سیاسی حکمت عملی، شائع ہوکرمنظرعام پرآگئی ہے کہ جسے آئندہ روشن نامی پبلیکشنز نے شائع کیا ہے۔

اس کتاب کے دیباچہ میں آیا ہےکہ رسول اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے دورسے ہی نظریہ مہدویت اورمنجی عالم بشریت کے ظہورکا عقیدہ موجورتھا اوراوائل اسلام کا معاشرہ اس نظریے سے مکمل طورپرآگاہ تھا، اس مسئلے کا بہترین گواہ وہ روایات ہیں کہ جن میں مہدویت اوراس سے مربوط مسائل کے بارے میں بحث کی گئی ہے۔ پیغمبراکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے بعد اسلامی معاشرہ دو زمانوں یعنی امام معصوم کےعصرحضوراورعصرغیبت میں تقسیم ہوجاتا ہے۔ عصرظہورمیں ائمہ معصومین معاشرے میں موجود ہیں اورلوگ براہ راست امام سے اپنے سوالات پوچھتے ہیں اورامام کےپاس جا کراپنی مشکلات کو حل کرتے ہیں۔ لیکن عصرغیبت میں امام معصوم کے پردہ غیبت میں جانے کے بعد لوگ براہ راست امام سے ملاقات نہیں کرسکتے ہیں اورروایات میں بھی واضح طور پرامام عصر کے نام اورعصرغیبت کے بارے میں بحث کی گئی ہے۔ اس مسئلے سے لوگوں کی آگاہی باعث بنی ہے کہ بعض گمراہ لوگوں نے اپنے دنیاوی مقاصد کے حصول کے لیے امام مہدی ہونے کا دعویٰ کیا ہے اورلوگوں کو اپنی طرف دعوت دی ہے اوراس طرح انہوں نے لوگوں کو گمراہی کی طرف دھکیلا ہے۔

اسی وجہ سے ائمہ معصومین علیہم السلام نے اسلامی معاشرے میں لوگوں کو گمراہی سے بچانے کے لیے مہدویت اورعصرغبیت کے مسائل سے انہیں آگاہ کیا ہے اوربعض مقامات پران کا مقابلہ کیا ہے۔

527205

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

سپاہ پاسداران کی زمینی مشقوں کا آغاز

خبررساں ایجنسی شبستان فوجی مشقوں کے پہلے مرحلے میں، فرضی دشمن کے ٹھکانوں کو مرصاد نامی جدید ترین اسمارٹ اور گائیڈڈ میزائلوں اور راکٹوں سے نشانہ بنایا جارہاہےپیامبر اعظم گیارہ فوجی مشقیں مرکزی ایران کے صحرائی علاقے میں بدھ تک جاری رہیں گی، جن کے دوران سپاہ کی بری فوج کے مختلف یونٹ فرضی دشمن کے خلاف انٹیلی جینس کارروائیاں بھی انجام دیں گے۔ اس دوران بیرونی دشمن کے ہر ممکنہ حملے سے نمٹنے کی غرض سے بری فوج کی توانائیوں کا مظاہرہ کیا جائے گا۔

منتخب خبریں