خبرگزاری شبستان

یکشنبه ۳ شهریور ۱۳۹۸

الأحد ٢٤ ذو الحجّة ١٤٤٠

Sunday, August 25, 2019

وقت :   Monday, April 18, 2016 خبر کوڈ : 62874

مہدویت کے دفاع میں ولادت امام جواد﴿ع﴾ کا اہم کردار
خبررساں ایجنسی شبستان: حضرت امام جواد علیہ السلام کی ولادت نے ہی مہدویت کے دفاع میں اہم کردارادا کیا ہے،کیونکہ تاریخ اسلام میں آپ چھوٹی عمرکے سب سے پہلے امام تھےکہ جنہوں نے پانچ سال کی عمرمیں حضرت ولی عصرعجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کی امامت کے مسئلے کو قبول کرنے کی راہ ہموارکی تھی۔

مہدویت کےماہرحجة الاسلام محمد رضا فوادیان نے خبررساں ایجنسی شبستان کے نامہ نگارسے گفتگو کے دوران عقیدہ مہدویت کی دفاع کے بارے میں حضرت جواد الائمہ علیہ السلام کی کوششوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ حضرت جواد علیہ السلام کی ولادت نےعقیدہ مہدویت کے دفاع میں اہم کردارادا کیا ہے۔ کیونکہ تاریخ اسلام میں حضرت جواد علیہ السلام وہ پہلے امام ہیں کہ جو بچپن میں امامت کے عہدے پرفائزہوئے تھے کہ اس چیز نے درحقیقت پانچ سال کی عمرمیں حضرت ولی عصرعجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کی امامت کے مسئلےکی قبولیت کی راہ ہموارکی تھی۔

انہوں نےمزید کہا ہےکہ امام مہدی علیہ السلام پانچ سال کی عمرمیں امامت کے عہدے پرفائزہوئے تھے، لیکن شیعوں کے لیے اس مسئلے کو قبول کرنا اتنا سخت نہیں تھا کیونکہ آپ سے پہلے امام ہادی علیہ السلام اورامام جواد علیہ السلام بچپن میں امامت کے عہدے پرفائزہوچکے تھے۔ لہذا لوگوں کے لیے اس مسئلے کو قبول کرنا کوئی مشکل کام نہیں تھا۔

انہوں نےمہدویت کے بارے میں امام جواد علیہ السلام کی احادیث کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ امام جواد علیہ السلام کی احادیث میں امام مہدی علیہ السلام کی ولادت،غیبت اورمنتظرین کی ذمہ داریوں کے بارے میں مطالب بیان کیے گئے ہیں۔ امام جواد علیہ السلام ١۹۵ھ قمری میں پیدا ہوئے اور۲۰۳ق میں بچپن میں امامت کے منصب پرفائزہوئے تھے اورشیعوں کے لیے بچپن میں امامت کا یہ پہلا تجربہ تھا اورجب ساٹھ سال کے بعد امام مہدی علیہ السلام پانچ سال کی عمرمیں امامت کے عہدے پرفائزہوئے توشیعوں کے لیے اس مسئلے کو قبول کرنا کوئی سخت کام نہیں تھا۔

حجة الاسلام فوادیان نے کہا ہےکہ حضرت جواد علیہ السلام سترہ سال امامت کے عہدے پرفائزرہے اور۲۲۰ھ ق کو شہید کردیے گئے۔ لیکن مہدویت کے بارے میں امام جواد علیہ السلام کی روایات بہت کم ہیں کیونکہ اس دورمیں انتہائی سخت حالات تھے اورشیعہ اس دورمیں آسانی سے زندگی نہیں گزار سکتے تھے۔ یہاں تک کہ حالات اس قدرسخت ہوگئے تھے کہ جناب عبدالعظیم الحسنی علیہ السلام مسئلہ مہدویت کے بارے میں بہت کم جانتے ہیں۔

انہوں نے ائمہ علیہم السلام کے درمیان حضرت حجت علیہ السلام کی خاص صفات کی طرف اشارہ کرتے ہوئےکہا ہے کہ آپ کی ایک اہم خصوصیت،آپ کی ولادت کا مخفی ہونا ہے چونکہ باقی ائمہ علیہم السلام کی ولادت ظاہراورعیاں تھی۔ امام جواد علیہ السلام نے امام مہدی علیہ السلام کے نسب کے بارے میں فرمایا ہے کہ وہ میرے تیسرے بیٹے ہیں اورپھرفرمایا کہ امام مہدی علیہ السلام منتظر اورقائم ہیں۔

انہوں نےمزید کہا ہے کہ حضرت جواد الائمہ علیہ السلام نے امام مہدی علیہ السلام کے دو القاب پرخصوصی توجہ دی ہے۔ یعنی قائم اورمنتظر۔ جب آپ سے سوال کیا گیا کہ آپ کے بیٹے کو کیوں قائم کا نام دیا گیا ہے؟ توآپ نے فرمایا کہ وہ اس وقت قیام کریں گے کہ جب لوگ ان کی یاد کو فراموش کردیں گے۔ جب ان سے سوال کیا گیا کہ انہیں منتظرکیوں کہا جاتا ہے تو امام جواد علیہ السلام نے فرمایا کہ چونکہ غیبت کے دورمیں کچھ خاص مسلمان ان کے ظہورکا انتظارکریں گے۔

537043

   

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز

سماجی: اسلامی جمہوریہ ایران کے شہر بندرعباس میں 8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز ہوچکا ہے جس میں دنیا بھر سے مسلمان دانشور، علماء، مفکرین اور عمائدین شرکت کررہے ہیں۔

منتخب خبریں