خبرگزاری شبستان

سه شنبه ۲۶ شهریور ۱۳۹۸

الثلاثاء ١٨ المحرّم ١٤٤١

Tuesday, September 17, 2019

وقت :   Thursday, November 3, 2016 خبر کوڈ : 65635
حجة الاسلام رحیم کارگر:
امام زمانہ﴿عج﴾ کی مدد کے لیےتہذیب نفس اورفوجی ٹریننگ کی ضرورت ہے
خبررساں ایجنسی شبستان: حسینی تحریک انبیاء اورتمام حق پسندوں کی جدوجہد اورقیاموں کا تسلسل ہے اوراس راہ میں مختلف انقلاب رونما ہوئےہیں اورتحریکیں اٹھیں ہیں یہاں تک کہ یہ حضرت امام مہدی علیہ السلام کےعالمی انقلاب پرختم ہوجائے۔

خبررساں ایجنسی شبستان کی رپورٹ کےمطابق مہدویت کے محقق حجة الاسلام والمسلمین رحیم کارگرنے اپنے ٹیلیگرام پرمہدوی معاشرے میں امام حسین﴿ع﴾ کے اہداف کا احیاء﴾ کے بارے میں لکھا ہے کہ اگر دنیا پرامام زمانہ علیہ السلام کی کامیابی معجزے یا تکوینی ولایت کے ذریعے ہو تو پھر افراد کی تیاری کی ضرورت نہیں ہے۔ بنابریں منتظرین کی خصوصیات اورشرائط کو ذکر کرنا بھی بےفائدہ ہوگا؛لیکن اگرامام زمانہ علیہ السلام کا عالمی ظہورضروری شرائط کا تقاضا کرتا ہے تو اس وقت امت مسلمہ کی آمادگی کی ضرورت ہے اورخانہ کعبہ میں ظہورکےاعلان کےبعد انہیں سپاہیوں اورجنگجو اورتجربہ کارمردوں کی ضرورت ہے اورانہیں بہت زیادہ افراد کی ضرورت ہے تاکہ مکہ اورمدینہ کو آزاد کیا جاسکے اوراس کے بعد عراق کو فتح کریں اوردنیا کے تمام ظالموں کے خلاف جنگ کریں۔ پس فورس کی ضرورت ہے،شہادت طلب افراد کی ضرورت ہے تاکہ شہادت طلبی اور شجاعت کے ساتھ دشمنوں کے تمام محاذوں کو فتح کریں اورکسی چیز سے نہ ڈریں۔ بنابریں وسیع وسائل کی ضرورت ہےتاکہ اپنے فوجی ذرائع کے ساتھ اپنے دشمنوں کا مقابلہ کریں۔

لہذا ہمیں تیار ہونا چاہیے اوراپنی تہذیب نفس کرنی چاہیے اورفوجی مشقوں کو انجام دینا چاہیے اور پھریہ فریاد کرنی چاہیے﴿عجل علی ظھورک﴾۔ بنابریں ہرکوئی امام زمانہ علیہ السلام کےمنتظر ہونے کا دعویٰ نہیں کرسکتا ہے۔اسی بنا پرامام حسین علیہ السلام نے اپنی شہادت سےکچھ لمحے قبل فلسفہ انتظاراورمسئلہ قیام کے بارے میں فرمایا تھا اورروشن مستقبل کی بشارت دی تھی۔

 امام حسین علیہ السلام کی خونی  تحریک، انبیاء اورتمام حق پسندوں کی جدوجہد اورقیاموں کا تسلسل ہے اوراس راہ میں مختلف انقلاب رونما ہوئےہیں اورتحریکیں اٹھیں ہیں یہاں تک کہ یہ حضرت امام مہدی علیہ السلام کےعالمی انقلاب پرختم ہوجائے۔ اس دور میں ہونے والے زیادہ ترقیام،واقعہ عاشورا سے متاثر ہیں۔ یقینا امام مہدی علیہ السلام کا قیام بھی تحریک عاشورا کا تسلسل ہے ۔اس نظریے کی اہم ترین دلیل دونوں قیاموں کے اہداف،پیغامات اورپروگراموں کا ہم آہنگ ہونا ہے۔ یہ دونوں تحریکیں ظلم وستم اورفساد کےخلاف ہیں اوران کا اصلی مقصد معاشرے کی اصلاح، دینی تعلیمات کا احیاء، مظلوموں اورمحروموں کی نجات،ظالم اورجابرحکمرانوں کی بیعت سے روگردانی اورانسان کی ترقی اورکمال کی راہ میں رکاوٹوں کو ہٹانا ہے۔

584485

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز

سماجی: اسلامی جمہوریہ ایران کے شہر بندرعباس میں 8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز ہوچکا ہے جس میں دنیا بھر سے مسلمان دانشور، علماء، مفکرین اور عمائدین شرکت کررہے ہیں۔

منتخب خبریں