خبرگزاری شبستان

جمعه ۱ بهمن ۱۳۹۵

الجمعة ٢٢ ربيع الثاني ١٤٣٨

Friday, January 20, 2017

وقت :   Tuesday, January 03, 2017 خبر کوڈ : 66288

مہدویت کےدفاع میں حضرت عبدالعظیم حسنی(ع) کا کردار
خبررساں ایجنسی شبستان:حضرت عبدالعظیم حسنی علیہ السلام کی کتاب(خطب امیرالمومنین علیہ السلام) نہج البلاغہ کی تالیف کے لیے سید رضی(رہ) کا ایک ماخذ تھا اورنیزامام جواد علیہ السلام سےآپ نے جوروایت نقل کی ہےاس میں امام مہدی علیہ السلام کےاسرارسے پردہ ہٹایا ہے۔

حضرت مہدی موعود علیہ السلام ثقافتی فاونڈیشن کےثقافت ، تعلیم اورتحقیقات کےامورکے مشیرحجۃ الاسلام والمسلمین محمد صادق کفیل نےخبررساں ایجنسی شبستان کےنامہ نگارسے گفتگو کے دوران حضرت عبدالعظیم حسنی علیہ السلام کی ولادت باسعادت پرمبارکباد پیش کرتے ہوئےکہا ہےکہ آپ چارربیع الثانی ۷۳ہ ق کو پیدا ہوئے تھے اورآپ پانچ معصومین علیہ السلام کے دورمیں رہے ہیں یعنی امام کاظم علیہ السلام کے دورسے لے کرامام حسن عسکری علیہ السلام کے دورتک زندہ رہے ہیں۔

انہوں نےمزید کہا ہےکہ آپ چارواسطوں سے امام حسن مجتبیٰ علیہ السلام سےجاملتے ہیں؛ یعنی آپ امام حسن علیہ السلام کی اولاد میں سے ہیں اورآپ نے دوکتابیں تالیف کی تھیں ایک(خطب امیرالمومنین علیہ السلام) ہےکہ جونہج البلاغہ کی تالیف کےلیے سید رضی کا منبع بھی رہی ہے اوردوسری کتاب کانام (یوم اورلیلہ) ہےکہ جس میں دن اوررات کےاحکام اوردعائیں بھی نقل ہوئی ہیں۔

کفیل نےمزید کہا ہےکہ حضرت عبدالعظیم حسنی علیہ السلام نے امام جواد علیہ السلام سےایک روایت نقل کی ہےکہ جس میں آیا ہےکہ«للقائم (ع) غيبة امدها طويل. کاني بالشيعة يجولون جولان الغنم يطلبون المرعي فلا يجدونه الا و من ثبت منهم علي دينه لم يفس قلبه لطول غيبة امامه فهو معي في درجتي يوم القيامة ثُمَّ قَالَ ع إِنَّ الْقَائِمَ مِنَّا إِذَا قَامَ لَمْ یکنْ لِأَحَدٍ فِی عُنُقِهِ بَیعَةٌ فلذلک تخفی ولادته و یغیب شخصه اکمال الدین».

انہوں نےکہا ہےکہ ان روایات میں غیبت کے دورمیں شیعوں کی صورتحال کی وضاحت کی گئی ہےکہ اس دورمیں شیعہ حیران وپریشان ہوں گے اوروہ کسی پناہ گاہ کی تلاش میں ہیں لیکن انہیں کوئی پناہ نہیں ملےگی لیکن وہ پسپائی اختیارنہیں کریں گے اورآمدورفت رکھیں گےاورکسی جگہ پررکیں گے نہیں۔

کفیل نےمزید کہا ہےکہ غیبت کے دورمیں شیعوں کی پہلی صفت نہ رکنا ہے۔ یعنی غیبت کے دورمیں شیعہ اپنے دین پرثابت قدم رہیں گے اوراس روایت کےمطابق شیعوں کی ایک اورخصوصیت یہ ہے کہ وہ شیعہ قسی القلب اورسخت دل نہیں ہیں کیونکہ بعض اوقات امام علیہ السلام کی دوری کی وجہ سے دل سخت ہوجاتے ہیں۔

انہوں نے اس روایت کی بنا پرامام عصرعلیہ السلام کی غیبت کی دلیل کی طرف اشارہ کرتے ہوئےکہا ہےکہ اس روایت میں ہے کہ امام زمانہ علیہ السلام اس وقت ظہورکریں گےکہ جب وہ طاغوت کے ساتھ جنگ کرسکیں گےاسی وجہ سےآپ کی ولادت بھی مخفی تھی۔

حضرت مہدی موعود(عج) ثقافتی فاونڈیشن کےتعلیمی، ثقافتی اورتحقیقاتی امورکےمشیر نےامام جواد علیہ السلام کی ایک اور روایت کی طرف اشارہ کرتے ہوئےکہا ہےکہ آپ عبدالعظیم حسنی علیہ السلام سے فرماتے ہیں کہ ہمارے قائم کا نام مہدی ہے(يَجِبُ أَنْ يُنْتَظَرَ فِي غَيْبَتِهِ وَ يُطَاعَ فِي ظُهُورِهِ) یعنی ان کےظہورکا انتظارکرنا واجب ہے اوراسی طرح ان کی اطاعت کرنا بھی واجب ہے۔ ایک اورروایت میں ہےکہ ہمارے شیعوں کا بہترین عمل انتظارفرج ہے۔

598607

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

تہران کی مرکزی نمازجمعہ کے خطبے

خبررساں ایجنسی شبستان تہران کے خطیب جمعہ حجت الاسلام کاظم صدیقی نے نماز کے خطبوں میں کہا کہ بحرینی عوام آزادی اور جمہوریت چاہتے ہیں جو ان کا جائزمطالبہ ہے لیکن بحرین پر مسلط پٹھو حکومت بحرینی عوام کی آزادی کی خواہش اور امنگوں کو کچل دینا چاہتی ہے.

منتخب خبریں