خبرگزاری شبستان

دوشنبه ۲ بهمن ۱۳۹۶

الاثنين ٦ جمادى الأولى ١٤٣٩

Monday, January 22, 2018

وقت :   Sunday, January 08, 2017 خبر کوڈ : 66345

امیرالمومنین(ع) کا عہدیداروں کی بدعنوانیوں کےساتھ سخت برتاو
خبررساں ایجنسی شبستان: جب میرا خطرتمہارے پاس پہنچےتوفوری طورپرابن ہرمہ کو بازارکےعہدے سے برطرف کرو؛لوگوں کے حقوق کی وجہ سے اسے جیل میں ڈال دو اورسب کو اس چیزسے آگاہ کرو تاکہ اگرکسی کو کوئی شکایت ہوتو وہ آکربیان کرے۔

خبررساں ایجنسی شبستان کی رپورٹ کےمطابق جب امیرالمومنین علی علیہ السلام(اہواز کے بازارکےعہدیدار) ابن ہرمہ کی خیانت سے باخبرہوئے توآپ نے اہوار کےحاکم رفاعہ کو ایک خط لکھا: : جب میرا خطرتمہارے پاس پہنچے تو فوری طورپرابن ہرمہ کو بازارکے عہدے سے برطرف کرو؛لوگوں کے حقوق کی وجہ سے اسے جیل میں ڈال  دو اورسب کو اس چیزسے آگاہ کرو تاکہ اگرکسی کو کوئی شکایت ہوتو وہ آکربیان کرے۔ اپنے تمام ماتحت ملازمین کو میرے اس حکم سے آگاہ کرو تاکہ وہ میرے نظریےکو جان لیں۔ ابن ھرمہ کے سلسلے میں غفلت اورسستی سے کام نہ لو ورنہ اللہ کے نزدیک تباہ وبرباد ہوجاوگے اورمیں انتہائی بدترین شکل میں تمہیں تمہارےعہدے سے برطرف کروں گا اورتمہیں اللہ کی پناہ میں دیتا ہوں کہ اگرتم نے اس کام میں سستی کی۔

اے رفاعہ، جمعہ کے دن اسے زندان سے نکال کر۳۵کوڑے مارو اوراسے بازارمیں گھماو،اس کے بعد اگرکسی نے گواہ کے ساتھ شکایت کی تو اسے اورگواہ کو قسم دو،اس وقت ابن ھرمہ کےمال سےاس کا حق ادا کرو، پھراس کے ہاتھ باندھ کراورذلت کے ساتھ دوبارہ زندان میں قید کردو اوراس کے پاوں میں زنجیریں ڈال دو،فقط نماز کے وقت اس کے پاوں سے زنجیریں اتارو اوراس کے لیےکھانے پینے یا پہننے کی کوئی چیزلائیں تو رکاوٹ نہ ڈالو اورکسی کو اس سے ملاقات کرنے کی اجازت نہ دو تاکہ اسےنجات کے راستے کی تعلیم دے اوراگرتمہیں رپورٹ دی گئی کہ کسی نے اسے کوئی چیزسکھائی ہےتاکہ مسلمان کو نقصان پہنچے تو جس نے اسے تعلیم دی ہے اسے مارو اورجیل میں ڈٓال دو تاکہ وہ توبہ کرے اوراپنے کام سے پشیمانی کا اظہارکرے۔

اے رفاعہ ،ابن ھرمہ کےعلاوہ تمام قیدیوں کو زندان کےصحن میں لے کرآو، مگریہ کہ اس کی جان کو خطرہ ہو تو اس صورت میں اسے دیگرقیدیوں کے ساتھ زندان کے صحن میں لے کرآو، اگروہ جسمانی طاقت رکھتا ہے تو ہرتیس دن کے بعد اسے ۳۵کوڑے مارو اوراس واقعہ کی مجھے رپورٹ دو اوراس کےجانشین کا نام بھی بتاواوراس کی تنخواہ کاٹ دو۔

منبع: قاضي نعمان، دعائم الإسلام، تحقيق: آصف بن علي أصغر فيضي،قاهره، دار المعارف ،دوسرا ایڈیشن، صص532-533.

599635

 

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

دوسروں کو امن سے محروم کرنے کا وقت ختم

خبررساں ایجنسی شبستان اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے آج بروز پیر فایننشل ٹائمز میں اپنے ایک بیان میں اس بات پر زور دیا کہ آج ماضی کے برعکس دوسروں کو امن سے محروم کرنے کا وقت ختم ہو چکا اور سیکورٹی نیٹ ورک قائم کرنے کا وقت آ پہنچا ہے اور امن کو صرف اپنے لئے نہیں بلکہ دوسروں کے لئے بھی برقرار کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خلیج فارس کے علاقےمیں ایک خاص گروہ کیلئے امن قائم کرنے کا خیال اب ماضی کا حصہ بن چکا ہے اس لئے کہ خلیج فارس کے علاقے کے تمام ملکوں کے مفادات مشترکہ ہیں۔

منتخب خبریں