خبرگزاری شبستان

سه شنبه ۳۱ مرداد ۱۳۹۶

الثلاثاء ٣٠ ذو القعدة ١٤٣٨

Tuesday, August 22, 2017

وقت :   Sunday, June 18, 2017 خبر کوڈ : 68296

موریطانیہ کی مساجد کو شدت پسندی کے فروغ کی اجازت نہیں ہوگی
بین الاقوامی: موریطانیہ کے اسلامی امور کے وزیر نے کہا کہ مقامی مساجد کے منبروں سے شدت پسندی کی تبلیغ ممنوع ہے۔

خبررساں ایجنسی شبستان کی رپورٹ کے مطابق موریطانیہ کے اسلامی امور کے وزیر نے اعلان کیا ہے کہ ہم نے موریطانیہ کی مساجد پر پابندی لگادی ہے کہ وہ شدت پسندی کے فروغ سے باز رہیں۔

احمد ولد اہل داوود نے کہا کہ یہ کسی صورت درست نہیں ہے کہ مساجد کو سیاسی یا انفرادی اہداف کیلئے استعمال کیا جائے اگر ایسا ہوا تو حکومت سخت ایکشن لے گی۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے اقدار کی ایک فہرست تیار کی ہے جسے شائع کردیا گیا ہے کسی بھی مسجد سے ان اقدار کی خلاف ورزی ہوئی تو اس مسجد کی انتظامیہ کے خلاف سخت سے سخت ایکشن لیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے بڑے سوچ بچار کے بعد اسلامی و اخلاقی اقدار کا چارٹ ترتیب دیا ہے ہم امید کرتے ہیں کہ تمام مساجد اس چارٹ کی پابندی کریں گی اور مساجد کے منبروں کو سیاسی یا شدت پسندی کے فروغ کیلئے استعمال نہیں کیا جائے گا۔

636270

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

نوجوانوں میں دینی اور انقلابی جذبے کی تقویت پر زور

خبررساں ایجنسی شبستان پیر کی صبح صوبہ یزد اور ہمدان کے تعلیمی اور ثقافتی امور کے عہدیداروں کے ایک گروپ سے خطاب کرتے ہوئے رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے نوجوان نسل میں انقلابی اور جہادی جذبے کی تقویت پر زور دیا۔

منتخب خبریں