خبرگزاری شبستان

دوشنبه ۲ بهمن ۱۳۹۶

الاثنين ٦ جمادى الأولى ١٤٣٩

Monday, January 22, 2018

وقت :   Sunday, July 16, 2017 خبر کوڈ : 68655
استاد حسین انصاریان:
شیعہ عرفان، آیات و روایات سے اخذ کیا گیا ہے
شبستان نیوز: قرآن کے مفسر اور محقق نے کہا ہے کہ عرفان ایک ایسی باطنی حالت ہے جو قرآن اور اہل بیت(ع)کی روایات سے مکمل طور پر متمسک ہو کر حاصل ہوتی ہے۔در حقیقت یہ حالت خدا وند متعال کی نورانی آیات اور ائمہ ہدیٰ علیہم السلام کی روایات سے لی گئی ہے۔

شبستان نیوز ایجنسی نے علمی و ثقافتی ادارے دار العرفان کے عمومی و بین الاقوامی روابط کے شعبے کے حوالے سے خبر نشر کی ہے کہ استاد حسین انصاریان نے شمالی لبنان میں علوی مشایخ اور ائمہ جماعت کے ایک اجتماع سے ملاقات میں اس بات کا اظہار کیا ہے کہ شیعی عرفان حقیقت میں دعائے کمیل، دعائے ابوحمزہ ثمالی اور دعائے عرفہ امام حسین علیہ السلام  میں موجود اعلیٰ معارف و مفاہیم کا ایک گوشہ ہے۔

علوم قرآنی اور معارف اسلامی کے محقق نے اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ شیعی عرفان اپنی ماہیت و حقیقت کے لحاظ سے اس عرفان سے مختلف ہے جو ماضی میں رائج رہا ہے یا موجودہ زمانے میں ہمیں جس کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگرچہ انسان کے بنائے ہوئے عرفان کا رنگ ڈھنگ خدائی ہوتا ہے، مگر یہ عرفان انسان کو مرکزی حیثیت دیتا ہے اور اس عرفان کے حامل افراد، لوگوں کو غیر خدا کی طرف دعوت دیتے ہیں۔

حوزہ علمیہ کے استاد نے کہا کہ شیعی عرفان قرآن مجید اور اہل بیت علیہم السلام کے بلند معارف و تعلیمات کو مرکزی حیثیت دیتا ہے۔ ایسی تعلیمات جو خداوند کریم کی طرف سے نازل کی گئی ہیں اور حقیقت میں تمام انسانوں کو خدا کی طرف دعوت دیتی ہیں نہ کہ غیر خدا کی طرف بلاتی ہیں۔

642196

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

دوسروں کو امن سے محروم کرنے کا وقت ختم

خبررساں ایجنسی شبستان اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے آج بروز پیر فایننشل ٹائمز میں اپنے ایک بیان میں اس بات پر زور دیا کہ آج ماضی کے برعکس دوسروں کو امن سے محروم کرنے کا وقت ختم ہو چکا اور سیکورٹی نیٹ ورک قائم کرنے کا وقت آ پہنچا ہے اور امن کو صرف اپنے لئے نہیں بلکہ دوسروں کے لئے بھی برقرار کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خلیج فارس کے علاقےمیں ایک خاص گروہ کیلئے امن قائم کرنے کا خیال اب ماضی کا حصہ بن چکا ہے اس لئے کہ خلیج فارس کے علاقے کے تمام ملکوں کے مفادات مشترکہ ہیں۔

منتخب خبریں