خبرگزاری شبستان

دوشنبه ۲ بهمن ۱۳۹۶

الاثنين ٦ جمادى الأولى ١٤٣٩

Monday, January 22, 2018

وقت :   Sunday, July 16, 2017 خبر کوڈ : 68659

یمن جانے والا تیل بردار بحری جہاز اغوا
خبررساں ایجنسی شبستان یمنی ذرائع نے بتایا ہے کہ اغوا کیا جانے والا تیل بردار بحری جہاز، یمنی صوبے الحدیدہ کے بجلی گھر کے لیے ڈیزل لے کر آرہا تھا تاہم جارح سعودی فوجی، اسے اغوا کر کے متحدہ عرب امارات کی بندرگاہ الفجیرہ لے گئے۔

دوسری جانب یمن کی اعلی سیاسی کونسل کے صدر صالح صماد نے کہا ہے کہ امریکہ، برطانیہ، سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات یمن پر تسلط جمانے کے لیے اسے جارحیت کا نشانہ بنا رہے ہیں۔
انہوں نے یہ بات زور دے کر کہی کہ دنیا کو یمنی عوام کی آواز سننے کی کوشش کرنا چاہیے جو مذکورہ چار ملکوں کو جارح سمجھتے ہیں۔
قابل ذکر ہے کہ سعودی عرب اور اس کے اتحادی ملکوں نے امریکہ اور برطانیہ کی ایما پر چھبیس مارچ دو ہزار پندرہ سے یمن کو جارحیت کانشانہ بنا رکھا ہے۔
سعودی جارحیت کے نتیجے میں بارہ ہزار سے زائد یمنی شہری شہید اور لاکھوں بے گھر ہوئے ہیں جبکہ اس غریب اسلامی ملک کے بنیادی ڈھانچے کو بمباری کر کے تباہ کر دیا گیا ہے۔

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

دوسروں کو امن سے محروم کرنے کا وقت ختم

خبررساں ایجنسی شبستان اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے آج بروز پیر فایننشل ٹائمز میں اپنے ایک بیان میں اس بات پر زور دیا کہ آج ماضی کے برعکس دوسروں کو امن سے محروم کرنے کا وقت ختم ہو چکا اور سیکورٹی نیٹ ورک قائم کرنے کا وقت آ پہنچا ہے اور امن کو صرف اپنے لئے نہیں بلکہ دوسروں کے لئے بھی برقرار کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خلیج فارس کے علاقےمیں ایک خاص گروہ کیلئے امن قائم کرنے کا خیال اب ماضی کا حصہ بن چکا ہے اس لئے کہ خلیج فارس کے علاقے کے تمام ملکوں کے مفادات مشترکہ ہیں۔

منتخب خبریں