خبرگزاری شبستان

دوشنبه ۲ بهمن ۱۳۹۶

الاثنين ٦ جمادى الأولى ١٤٣٩

Monday, January 22, 2018

وقت :   Sunday, July 16, 2017 خبر کوڈ : 68665

سعودی عرب میں شیعوں کے قتل عام پر عربی اور مغربی ممالک کی خاموشی
بین الاقوامی: سعودی حکومت اپنے مخالفین کو شہر القطیف میں مختلف بہانوں سے پھانسی پر لٹکا رہا ہے اور ان کے جرائم کو ثابت کرنے سے عاجز ہے۔

خبررساں ایجنسی شبستان نے الرای الیوم کے حوالے سے خبر شائع کی ہے کہ عادل العوفی نے اپنے مقالہ میں ایسے مطالب کا انکشاف کیا ہے کہ آپ سن کر حیران ہوجائیں گے۔

انہوں نے اپنے مقالہ کا عنوان قرار دیا ہے کہ یہ لوگ جو القطیف میں مارے جارہے ہیں ان کا نام و نسب کیوں نہیں بتایا جاتا اور ان کے جرائم کو کیوں ذکر نہیں کیا جاتا تاکہ لوگ ان کے جرائم پڑھ کر خود فیصلہ کرسکیں۔

آئے دن جرائم کے الزامات میں ان کو پھانسی کے پھندے پر لٹکایا جارہا ہے آیا وہ سب لوگ گناہگار ہیں؟

اس سال سعودی عرب نے تقریبا چالیس افراد کو پھانسی دی ہے جو کہ سراسر ظلم ہے اور اس سے بالاتر ظلم یہ ہے کہ عربی ممالک اور مغربی حکومتیں اور اقوام متحدہ بھی ان جرائم پر پردہ پوشی کررہے ہیں ہمیں معلوم ہے کہ سعودی عرب نے دسیوں نیوز چینلز کا افتتاح کیا لیکن جب معلوم ہوا کہ ان کے حق میں نہیں ہیں وہ سارے لاپتہ ہوگئے ہیں۔

642024

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

دوسروں کو امن سے محروم کرنے کا وقت ختم

خبررساں ایجنسی شبستان اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے آج بروز پیر فایننشل ٹائمز میں اپنے ایک بیان میں اس بات پر زور دیا کہ آج ماضی کے برعکس دوسروں کو امن سے محروم کرنے کا وقت ختم ہو چکا اور سیکورٹی نیٹ ورک قائم کرنے کا وقت آ پہنچا ہے اور امن کو صرف اپنے لئے نہیں بلکہ دوسروں کے لئے بھی برقرار کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خلیج فارس کے علاقےمیں ایک خاص گروہ کیلئے امن قائم کرنے کا خیال اب ماضی کا حصہ بن چکا ہے اس لئے کہ خلیج فارس کے علاقے کے تمام ملکوں کے مفادات مشترکہ ہیں۔

منتخب خبریں