خبرگزاری شبستان

شنبه ۲۹ مهر ۱۳۹۶

السبت ١ صفر ١٤٣٩

Saturday, October 21, 2017

وقت :   Sunday, August 13, 2017 خبر کوڈ : 68927

میرزا اولنگ کا خونی واقعہ اور شیعوں کے خلاف کینہ توزی
شبستان نیوز : چند روز پہلے افغانستان میں اہل بیت علیہم السلام کے ماننے والوں نے ایک بار پھر محبت اہل بیت کی قیمت اپنی قیمتی جانوں کے نذرانے اور اپنے اموال کی لوٹ کھسوٹ اور اپنے عزیزوں کے اغوا کی صورت میں ادا کی۔ یہ عظیم جرم تکفیری نظریات کے حامل طالبان اور داعش کے مسلح دہشت گرد گروہ کے ہاتھوں انجام پایا۔

شبستان نیوز ایجنسی نے تیونس کی نیوز ویب ’’الصحوہ‘‘ کے حوالے سے خبر نشر کی ہے کہ گذشتہ اتوار کو افغانستان کے شہر میرزا اولنگ میں تکفیری نظریات کے حامل طالبان اور داعش کے مسلح دہشت گرد گروہ کے ہاتھوں دسیوں افراد قتل کر دیے گئے۔ داعش اور طالبان نے پہلے اس علاقے کا کنٹرول سنبھالا اس کے بعد اہل بیت علیہم السلام کے دسیوں پیروکاروں کو قتل کر دیا۔ انہیں قتل کرنے کے بعد 150 خاندانوں کو اغوا کر لیا جن میں کئی عورتیں اور بچے بھی شامل ہیں۔

ایک مقامی افغان حکومتی عہدیدار نے اس راز سے پردہ اٹھایا کہ تکفیریوں نے ان خاندانوں کے پچاس افراد کو جو اغوا کر لیے گئے تھے انتہائی بے دردی سے قتل کر دیا اور اس کے علاوہ ان دہشت گردوں کی طرف سے شیعہ نسل کشی کا خطرہ بھی ابھی تک موجود ہے۔

یہاں یہ بات انتہائی قابل ذکر ہے کہ اس مقامی عہدیدار نے علاقے میں موجود نیٹو فورسز سے مدد کی اپیل بھی کی ہے کہ علاقے میں موجود غیر ملکی افواج اس خطے کی طرف توجہ دیں اور علاقے کے لوگوں کی ان دہشت گردوں کے بے رحم ہاتھوں سے حفاظت کریں۔

           648268

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

ہنر، جنگ و دہشت سے مقابلے کا ہتھیار ہے

شبستان نیوز : وزارت امور خارجہ کے ترجمان بہرام قاسمی نے ’’اعلان گفتگو‘‘ نامی پوسٹرز کی نمائش میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس نمائش میں موجود ہر پوسٹر اتنی طاقت رکھتا ہے کہ سینکڑوں ڈونلڈ ٹرامپ کو جواب دے سکے۔

منتخب خبریں