خبرگزاری شبستان

پنج شنبه ۲۳ آذر ۱۳۹۶

الخميس ٢٦ ربيع الأوّل ١٤٣٩

Thursday, December 14, 2017

وقت :   Sunday, August 13, 2017 خبر کوڈ : 68931
آیت اللہ عبادی:
انبیائے الہی کے پیغام اوردین کی حقیقت میں بشرکی نجات پوشیدہ ہے
خبررساں ایجنسی شبستان: ایران کےصوبہ جنوبی خراسان کے نمائندہ ولی فقیہ نےاس مطلب کہ عدالت پسندی کے نظریے کو فروغ ملنا چاہیے، کی ضرورت پرزوردیتے ہوئےکہا ہے کہ اگرانبیائے الہی کے پیغام کی حفاظت کی جاتی تو بشر خدا اورعدل تک پہنچ جاتا لیکن آج کل کوئی بھی ظلم کے خلاف نہیں بولتا ہے چونکہ سب مرچکے ہیں اورگھٹن سے زیادہ اورکونسی بری موت ہے۔

خبررساں ایجنسی شبستان شعبہ بیرجند کی رپورٹ کے مطابق آیت اللہ عبادی نے ۱۳اگست کو مدرسہ علمیہ امام حسن مجتبیٰ علیہ السلام کےاساتذہ اوربعض طلباء سےملاقات کے دوران کہا ہےکہ احادیث میں آیا ہےکہ عالم اگرچہ ظاہری طورپراس دنیا سےچلا جاتا ہے لیکن وہ زندہ ہوتا ہےاورجاہل اگرچہ ظاہری طورپرزندہ ہو لیکن وہ مردہ  ہوتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا ہےکہ متعدد روایات میں آیاہے کہ حیات، علم کے مساوی ہے۔ زندگی کی روح علم میں ہے جبکہ اس کی موت جہالت میں ہے۔

آیت اللہ عبادی نےحیات کے درجات بتاتے ہوئےکہا ہےکہ حقیقی حیات حقیقی علم سے وابستہ ہے کہ جوموت کے بعد حاصل ہوگی کہ جب پردے ہٹ جائیں گے اورانسان اس کائنات کےتمام حقائق کا مشاہدہ کرے گالیکن اس دنیا میں وہ  فقط حیات کےا یک مرحلے میں موجود ہے۔

انہوں نے اس بات پرزوردے کرکہا ہےکہ اگرانبیائے الہی کے پیغام کی حفاظت کی جاتی تو انسان عدل، کمالات اورخدا تک پہنچ جاتا لیکن افسوس سے کہنا پڑتا ہےکہ اس وقت شیاطین اورنفسانی خواہشات نےانسان کو حقیقی علم اورعدل سے دورکردیا ہوا ہے اوردنیا کو بربریت اوروحشی پن نے گھیر لیا ہوا ہے اورکوئی بھی اس ظلم وستم کے مقابلے میں بات نہیں کرتا ہے کیونکہ وہ مرچکے ہیں اورگھٹن سے بری موت کونسی ہے۔

صوبہ جنوبی خراسان کے نمائندہ ولی فقیہ نےمزید کہا ہےکہ اگرانبیاء اوراوصیائے الہی اوردین کی حقیقت کا پیغام ٹھیک طریقے سے انسان تک  پہنچ جاتا اوروحشی پن سے باہرنکل آتا تو بشرامن وامان کو احساس کرے تو یہ بہت بڑی خدمت ہے۔

۶۴۸۳۷۳

 

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

غزہ پر اسرائیلی جارحیت میں درجنوں فلسطینی زخمی

خبررساں ایجنسی شبستان اسرائیل کے جنگی طیاروں نے بدھ کی رات اور جمعرات کی صبح غزہ پر شدید ترین فضائی حملے کیے۔ اگرچہ بدھ کی شب اور جمعرات کی صبح ہونے والے حملوں میں جانی اور مالی نقصان کی اطلاعات تاحال موصول نہیں ہوئی ہیں تاہم سیکورٹی و طبی ذرائع کا کہنا ہے شمالی غزہ کا علاقہ اسرائیل کے حملوں کا مرکز تھا۔

منتخب خبریں