خبرگزاری شبستان

دوشنبه ۳۰ بهمن ۱۳۹۶

الاثنين ٤ جمادى الثانية ١٤٣٩

Monday, February 19, 2018

وقت :   Sunday, August 13, 2017 خبر کوڈ : 68937

گزشتہ دو مہینوں کے دوران شہررقہ میں داعش کے زیرکنٹرول علاقوں میں کم ازکم۹۴۶عام شہریوں کا قتل
خبررساں ایجنسی شبستان: گزشتہ دو مہینوں کے دوران بین الاقوامی اتحاد کی فورسزکے شام کے شہررقہ میں داعش کے زیرکنٹرول علاقوں پرفضائی اورزمینی حملوں کے دوران ۹۴۶عام شہری مارے گئے ہیں۔

خبررساں ایجنسی شبستان نے آناٹولی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ رقہ میں خاموش قتل عام کے نام سے موسوم شام کے شہررقہ کےمقامی سیاسی ماہرین کے نیٹ ورک نے اپنی ایک رپورٹ میں اعلان کیا ہےکہ شام کے شمال میں واقع شہررقہ کے مرکز میں موجود دہشتگرد گروہ داعش کے خلاف امریکہ کی قیادت میں بین الاقوامی اتحاد کی فورسزبری اورفضائی حملوں میں ہی ازکم ۹۴۶ عام شہری مارے گئے ہیں۔

اسی طرح اس رپورٹ میں آیا ہے کہ گزشتہ دو مہینوں سے رقہ شہر کی بجلی اورپانی کٹی ہوئی ہے اوربین الاقوامی اتحادی فورسز کے حملوں کی وجہ سے ساڑھے چارلاکھ شہری اپنے اپنے گھروں کو چھوڑنے پرمجبورہوگئے ہوئے ہیں۔

اسی طرح دہشتگرد گروہ داعش کے توسط سے مینزنصب کرنے کی وجہ سے تقریبا تیس ہزارشہری فرارنہیں کرسکتے ہیں اوروہ قید ہوکررہ گئے ہوئے ہیں۔

قابل ذکرہےکہ رقہ شہرکےتحفظ کےلیے داعش کے خودکش حملوں میں اضافہ ہورہا ہے اورانہوں نے اس شہرمیں ساٹھ سےزائد خودکش حملے کیے ہیں۔

۶۴۸۳۴۶

 

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

آیت اللہ جاودان:

متقی لوگ بہشت میں اپنی مرضی کے مطابق زندگی بسر کریں گے

سماجی: آیت اللہ جاودان نے کہا کہ قرآن کریم متقی لوگوں کی صفات کو یوں بیان کرتا ہے کہ بہشت کے مقامات متقی لوگوں کی مرضی کے مطابق ہوں گے۔

منتخب خبریں