خبرگزاری شبستان

شنبه ۲۹ مهر ۱۳۹۶

السبت ١ صفر ١٤٣٩

Saturday, October 21, 2017

وقت :   Wednesday, October 11, 2017 خبر کوڈ : 69674
امریکہ:
حزب اللہ سے جنگ واشنگٹن کی ترجیحات میں سے ہے
خبررساں ایجنسی شبستان: امریکہ کی وزارت خارجہ نےاعلان کیا ہے کہ حزب اللہ کے ساتھ جنگ واشنگٹن کی ترجیحات میں سے ہے اورحزب اللہ کے دو کمانڈروں کی گرفتاری کے لیے 12ملین ڈالرز کا انعام مقررکیا گیا ہے۔

خبررساں ایجنسی شبسان نے العہد کے حوالے سے نقل کیا ہےکہ امریکہ کی وزارت خارجہ میں دہشتگرد مخالف امورکے رابط ناٹن سیلز نے ایک پریس کانفرنس میں اعلان کیا ہےکہ حزب اللہ لبنان کے ساتھ جنگ وائٹ ہاوس کی اہم ترین ترجیح شمارہوتی ہے۔

سیلز نے دعویٰ کیا ہے کہ تحریک حزب اللہ دنیا کی ایک خطرناک ترین دہشتگرد تنظیم ہے اورحزب اللہ امریکہ کی سلامتی کے لیے خطرہ ہے۔

امریکہ وزارت خارجہ نے گزشتہ روزاعلان کیا تھا کہ جو شخص بھی حزب اللہ لبنان کے قائدین اور کمانڈروں کے بارے میں کوئی معلومات فراہم کرے گا تو اسے 12ملین ڈالرز کا انعام دیا جائے گا۔

اس وزارت خانے نےاعلان کیا ہے کہ حزب اللہ کےغیرملکی آپریشن برگیڈ کےکمانڈرطلال حمیہ کے بارے میں معلومات دینے پر سات ملین ڈالر اوراس حزب کے اہم ترین فوجی کمانڈرفواد شکرکے بارے میں معلومات فراہم کرنے پرپانچ ملین ڈالرزدیے جائیں گے۔

دوسری جانب امریکہ کے دہشتگردی کے ساتھ جنگ مرکز کے سربراہ راسموسن نے اس پریس کانفرنس میں حزب اللہ کو القاعدہ اورداعش جیسے دہشتگرد گروہوں کی فہرست میں قراردیا ہے۔

اس نے کہا ہے کہ واشنگٹن ہرجگہ بالخصوص امریکہ میں حزب اللہ کے نقل وحرکت پرکڑی نظریں رکھے گا۔

راسموسن نے مزید کہا ہےکہ داعش اورالقاعدہ کےساتھ جنگ کے لیے کوششیں، حزب اللہ کا پیچھا کرنےکے سلسلےکو بند کرنےکا باعث نہیں بنیں گی۔

اس امریکی عہدیدارنے دعویٰ کیا ہےکہ حزب اللہ، امریکہ کےاندرحملہ کرنے کے لیے اپنی توانائیوں کو فروغ دے رہی ہے اورامریکہ اندراس گروہ کی سرگرمیوں پرکڑی نظری رکھی گئی ہیں۔

یہ بیانات ایسے حالات میں دیے جارہے ہیں کہ امریکہ شام میں دہشتگردوں کی واضح حمایت کررہا ہے۔

661467

 

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

ہنر، جنگ و دہشت سے مقابلے کا ہتھیار ہے

شبستان نیوز : وزارت امور خارجہ کے ترجمان بہرام قاسمی نے ’’اعلان گفتگو‘‘ نامی پوسٹرز کی نمائش میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس نمائش میں موجود ہر پوسٹر اتنی طاقت رکھتا ہے کہ سینکڑوں ڈونلڈ ٹرامپ کو جواب دے سکے۔

منتخب خبریں