خبرگزاری شبستان

دوشنبه ۲۷ آذر ۱۳۹۶

الاثنين ٣٠ ربيع الأوّل ١٤٣٩

Monday, December 18, 2017

وقت :   Wednesday, October 11, 2017 خبر کوڈ : 69676

قصہ گوئی بچے کی شخصیت اور اجتماعی شعور کو پروان چڑھاتی ہے
شبستان نیوز : نوجوانوں اور بچوں کی فکری پرورش کے ادارے کے ثقافتی معاون نے کہا ہے کہ قصہ گوئی ایک ایسی چیز ہے جو بچے کی شخصیت سازی کرتی ہے اور اس کے اجتماعی اور معاشرتی شعور کو پروان چڑھاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ قصہ گوئی ایرانیوں کے قدیم فنون میں سے ایک فن ہے، جس کے بہت سے فوائد بیان کیے جا چکے ہیں۔

شیراز سے شبستان نیوز ایجنسی کے نمائندے کی رپورٹ:

نوجوانوں اور  بچوں کی فکری پرورش کے ادارے کے ثقافتی معاون سعید رضا کامرانی نے آج ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ قصہ گوئی یا دوسرے لفظوں میں داستان گوئی ایک ایسی چیز ہے جو بچے کی شخصیت سازی کرتی ہے اور اس کے اجتماعی اور معاشرتی شعور کو پروان چڑھاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ قصہ گوئی ایرانیوں کے قدیم فنون میں سے ایک فن ہے، جس کے بہت سے فوائد بیان کیے جا چکے ہیں۔

انہوں نے اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ قصہ گوئی کی تاریخ پر اگر غور کیا جائے تو یہ کہنا غلط نہیں ہو گا کہ اس کا آغاز خلقت انسانی کے ساتھ ہی شروع ہو گیا تھا۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ قصے اگرچہ خیالی ہی کیوں نہ ہوں لیکن ان میں سے اکثر ایسے بھی ہوتے ہیں جو حقیقت میں تبدیل ہو جاتے ہیں۔

انہوں نے سورہ کہف کی آیات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ خداوند کریم اپنے آپ کو قصہ گو کہتا ہے اور بہت سے علماء کئی آیات کو قصے اورداستانیں ہی کہتے ہیں۔

661528

 



تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

ثقافت اور اس کے موضوعات کو پہچانے بغیر فقہ کوئی حکم نہیں دے سکتی

شبستان نیوز : آیت اللہ مبلغی نے کہا ہے کہ اعلیٰ اقدار اور نیک کاموں کو ترجیح دینے کے حوالے سے دین کی نظریے کو سامنے نہ رکھنا خدا پر افتراء باندھنے کے مترادف ہے۔ انہوں نے کہا کہ ثقافت اور اس کے موضوعات کو پہچانے بغیر فقہ کوئی حکم نہیں دے سکتی۔

منتخب خبریں