خبرگزاری شبستان

دوشنبه ۲۷ آذر ۱۳۹۶

الاثنين ٣٠ ربيع الأوّل ١٤٣٩

Monday, December 18, 2017

وقت :   Wednesday, October 11, 2017 خبر کوڈ : 69685

عراقی شہر الحویجہ کی آزادی کی کارروائیاں مکمل
خبررساں ایجنسی شبستان عراق کی مسلح افواج کے ایک سینیئر کمانڈر عبدالامیر رشید یاراللہ نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ فیڈرل پولیس ، ٹاسک فورس ، انسداد دہشت گردی فورس اور عوامی رضاکارفورس نے الحویجہ شہر کی آزادی کی کارروائیوں میں حصہ لیا جبکہ انہیں فوج کے ہیلی کاپٹروں کے یونٹ کی بھی پشتپناہی حاصل تھی.

الحویجہ شہر صوبہ کرکوک میں ایک اہم شہر شمارہوتاہے جس پر داعش نے جون دوہزار چودہ میں قبضہ کیا تھا - الحویجہ کی باقاعدہ آزادی کا اعلان عراقی وزیراعظم حیدر العبادی نے پانچ جون کو ہی کردیا تھا - اس درمیان عراقی وزیراعظم نے کہا ہے کہ دہشت گرد گروہ داعش کا رواں سال کے اختتام تک عراق سے مکمل طور پر صفایا کردیا جائےگاداعش نے جون دوہزار چودہ میں امریکا اور اس کے مغربی اور عرب اتحادیوں منجملہ سعودی عرب کی مالی اور اسلحہ جاتی حمایت سے عراق پر حملہ کرکے ایک بڑے علاقے پر قبضہ کرلیا تھا اور اس دوران اس نے بے پناہ انسانیت سوز جرائم کا ارتکاب کیا - اس کے بعد سے ہی عراقی فوج عوامی رضاکارفورس کی حمایت اور اسلامی جمہوریہ ایران کی فوجی مشاورت سے داعش کے زیرقبضہ علاقوں کو آزاد کرانے کی کارروائیاں شروع کیں اور نتیجے اب داعش کے زیرقبضہ بیشتر علاقے آزاد ہوچکےہیں جن میں داعش کا نام نہاد ہیڈکوارٹر موصل شہر بھی شامل ہے - فوجی ذرائع اور اسٹریٹیجیک ماہرین کا کہنا ہے کہ عراق میں داعش کا کام اب عملی طور پر تمام ہوچکاہے - عراقی وزیراعظم نے اسی طرح منگل اور بدھ کی درمیان اپنے ایک بیان میں بغداد اور اربیل کے درمیان ہر طرح کے مذاکرات کے امکان کو مسترد کردیا- ان کا کہنا تھا کہ عراقی کردستان کی مقامی انتظامیہ کےساتھ مذاکرات اسی صورت میں ہوں گے جب ریفرنڈم کے نتائج کو کالعدم قرار دے دیا جائے گا - دریں اثنا عراقی سیکورٹی فورس کے ایک سینیئر عہدیدار نے کہا ہے کہ عراقی حکومت کی سیکورٹی فورس جلد ہی کرکوک شہر میں داخل ہوجائے گی تاکہ شہر کا نظم ونسق سنبھال سکیں- عراقی سیکورٹی فورس کے ایک سینئیر عہدیدار نے کہا ہے کہ اس سلسلے میں عراق کی مسلح افواج کے کمانڈروں کی ایک مٹینگ ہونےوالی ہے جس میں یہ فیصلہ کیا جائے گا کہ عراقی سیکورٹی فورس کب کرکوک شہر میں داخل ہوں- عراقی حکومت کی سیکورٹی فورس کے مذکورہ سینیئر افسر کا کہنا تھا کہ یہ اقدام عراق کی مرکزی حکومت کی اس کوشش کے دائرے میں انجام پانے والا ہے جس کےتحت وہ کردستان کی مقامی انتظامیہ کے ساتھ متنازعہ علاقوں پر اپنی عملداری کو یقینی بنانا چاہتی ہے - عراق کی مرکزی حکومت نےکردستان کی مقامی انتظامیہ سے کہا تھا کہ وہ ریفرنڈم کرانے سے پہلے ہی کرکوک سے نکل جائے- اگرچہ کرکوک عراقی کردستان کی مقامی انتظامیہ کے زیرکنٹرول علاقے میں نہیں آتا اس کے باوجود اربیل کی مقامی انتظامیہ نے عراقی آئین کے برخلاف اس شہر پر قبضہ کررکھا ہے اور اس نے وہاں بھی ریفرنڈم کرایا ہے عراقی حکومت نے پورے ریفرنڈم کو غیرقانونی اور عراقی آئین کے منافی قراردیا ہے

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

ثقافت اور اس کے موضوعات کو پہچانے بغیر فقہ کوئی حکم نہیں دے سکتی

شبستان نیوز : آیت اللہ مبلغی نے کہا ہے کہ اعلیٰ اقدار اور نیک کاموں کو ترجیح دینے کے حوالے سے دین کی نظریے کو سامنے نہ رکھنا خدا پر افتراء باندھنے کے مترادف ہے۔ انہوں نے کہا کہ ثقافت اور اس کے موضوعات کو پہچانے بغیر فقہ کوئی حکم نہیں دے سکتی۔

منتخب خبریں