خبرگزاری شبستان

شنبه ۲۵ آذر ۱۳۹۶

السبت ٢٨ ربيع الأوّل ١٤٣٩

Saturday, December 16, 2017

وقت :   Tuesday, November 21, 2017 خبر کوڈ : 70316

بوکمال شہرکی آزادی کےبعد شامی فوج کےاہداف
خبررساں ایجنسی شبستان: جن جن علاقوں میں مسلح گروہ موجود تھےان تمام علاقوں میں شامی فوج کی فوجی کاروائیاں جاری رہیں گی اوردہشتگرد گروہوں کی تعبیرات اوراصطلاحات کے ساتھ ہرقسم کا کھیل موجودہ حقیقت میں کوئی تبدیلی ایجاد نہیں کرے گا۔

خبررساں ایجنسی شبستان کی رپورٹ کےمطابق روزنامہ (الثورۃ السوریہ) نےمصطفی مقداد کے آرٹیکل کو تحریرکرتے ہوئے لکھا ہےکہ بوکمال شہر دہشتگرد گروہ داعش کے وجود سے پاک ہوگیا ہے۔ فوج کےانجینئردھماکہ خیزمواد اورمینزکو تباہ کرنےکےدرپے ہیں کہ جو ان دہشتگرد گروہوں کے توسط سے شہرمیں نصب کی گئی ہیں۔ لیکن سوال یہ ہےکہ بوکمال اوراس کے نواحی علاقوں کے بعد کیا ہوگا؟ شام کی سرزمین پرداعش کی تباہی کے بعد شامی فوج اوراس کے مقابلے میں عراق کی سرزمین پرکیا اقدامات کرے گی؟

اس بات میں کوئی شک نہیں ہےکہ شامی فوج اس کےبعد رقہ اورحلب کے مشرقی علاقوں میں اپنی عسکری کاروائیاں جاری رکھےگی اورامریکہ کی غیرقانونی موجودگی قومی فورسزکےاقدامات پرتھوڑی سی تاثیرنہیں رکھے گی۔ اس علاقے میں امریکی فورسز کی موجودگی بین الاقوامی قوانین کے خلاف ہے اوریہ شام میں اپنے موجودگی کے جوبھی بہانے بنا رہا ہے وہ جھوٹے دعوے ہیں اوربین الاقوامی قوانین کے ساتھ سازگارنہیں ہیں۔ جبکہ امریکہ کی موجودگی، شام کے استقلال کی واضح خلاف ورزی ہے۔

شامی افواج اپنےتمام قومی اوربین الاقوامی قوانین سےاستفادہ کرتے ہوئے اپنے وطن کی وحدت اور اس کے استقلال کی حفاظت کے لیےتمام طریقےاستعمال کرے گی۔ اس کے شام فوج علاوہ دہشتگردی کو جڑسےاکھاڑپھینکے کے لیےان کی باقیماندہ جراثیم کےخاتمے تک چین سےنہیں بیٹھےگی اورجن ممالک نے دہشتگردی کے ساتھ جنگ کے بہانے سےاپنے لوگوں کے ساتھ خیانت کی ہے اوراس راہ میں اپنا پیسہ خرچ کیا ہے وہ بھی قابل بخشش نہیں ہے۔

670889

 

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

منتخب خبریں