خبرگزاری شبستان

شنبه ۲۵ آذر ۱۳۹۶

السبت ٢٨ ربيع الأوّل ١٤٣٩

Saturday, December 16, 2017

وقت :   Sunday, December 03, 2017 خبر کوڈ : 70460

ہنر کی زبان نماز کے فلسفہ و روح کی ترویج میں موثر ہے
شبستان نیوز : سید عباس صالحی نے کہا ہے کہ نماز کی حقیقت اور اس کی خوبصورتیوں کو شعر، فلم اور دوسرے فنون کے ذریعے زیادہ سے زیادہ آشکار کرنے کی کوشش کرنی چاہیے۔

شبستان نیوز ایجنسی کے ثقافتی شعبے کے نمائندے کی رپورٹ :

وزیر ثقافت و ارشاد اسلامی سید عباس صالحی نے آج نماز کے حوالے سے منعقد ہونے والی ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہماری دینی ادبیات میں نماز کی ایک خاص اہمیت ہے اور مخصوص الفاظ اور تفاسیر کے ذریعے اس کی اہمیت کو واضح اور روشن کیا گیا ہے۔ نماز دین کا ایک ایسا ستون ہے جس پر دین کی ساری عمارت قائم ہے۔ نماز دوسرے تمام دینی اعمال و افعال سے ممتاز حیثیت رکھتی ہے۔ حقیقت یہ ہے کہ نماز ہماری دینی تعلیمات میں سے سب سے اول و افضل رکن رہی ہے  اور دین کے باقی ارکان و اعمال کا دارومدار اسی پر ہے۔

انہوں نے اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ معاشرے کے اندر نماز، اس کی حقیقت، اس کی اہمیت، اس کی روح و فلسفے کو زیادہ سے زیادہ رائج کرنے کی ضرورت ہے ۔ اور اس کام کے لیے ہمیں نئے سے نئے وسائل کو استعمال کرنا چاہیےجن میں فنون کو زیادہ اہمیت حاصل ہے۔ فنون یعنی شعر، افسانہ، ڈرامہ، فلم وغیرہ کے ذریعے معاشرے کے اندر اس کی اہمیت کو زیادہ سے زیادہ رائج کیا جا سکتا ہے۔ اور ہمیں کوشش کرنی چاہیے کہ ان وسائل کی مدد سے معاشرے کو نماز سے آگاہ کریں۔

673528

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

منتخب خبریں