خبرگزاری شبستان

جمعه ۴ خرداد ۱۳۹۷

الجمعة ١١ رمضان ١٤٣٩

Friday, May 25, 2018

وقت :   Sunday, January 21, 2018 خبر کوڈ : 71107
سید حسن نصراللہ:
حزب اللہ کے خلاف امریکی الزامات ظالمانہ اوربےبنیاد ہیں
خبررساں ایجنسی شبستان: حزب اللہ لبنان کے سیکرٹری جنرل نے اپنےخطاب میں حزب اللہ کے خلاف امریکی الزامات کو ظالمانہ اوربےبنیاد قراردیا ہے۔

خبررساں ایجنسی شبستان نے العالم کےحوالے سے نقل کیا ہےکہ حزب اللہ لبنان کے سیکرٹری جنرل سید حسن نصراللہ نےحزب اللہ کے ایک کمانڈرعماد مغنیہ کے والد حاج فائزمغنیہ کے چہلم اور القنیطرہ کےشہداء کی برسی کی مناسبت سے جمعہ کے دن المجتبیٰ کمپلیکس میں خطاب کیا ہے۔

انہوں نے اپنے خطاب کےآغاز میں کہا ہے کہ اگرشہداء کی قربانیاں نہ ہوتیں تو آج لبنان میں امن وامان قائم نہ ہوتا۔ ہمیں ملک، خطے اورامت مسلمہ پرشہداء کےعظیم حق کا احترام کرنا چاہیے۔ شہداء کے خون نے سرزمین اورقیدیوں کی آزادی اورداعش اورتکفیری گروہوں کی شکست میں اہم کردارادا کیا ہے۔

سید حسن نصراللہ نےمزید کہا ہےکہ اللہ تعالیٰ کے لطف وکرم اورشہداء کی قربانیوں سے ہی امریکہ اوراس سے وابستہ تکفیری گروہوں کو ذلت آمیزشکست ہوئی اورملتوں کوکامیابی حاصل ہوئی ہے۔

انہوں نے اپنےخطاب میں منشیات کی اسمگلنگ میں حزب اللہ لبنان کے ملوث ہونے پرمبنی امریکی الزامات کی طرف اشارہ کرتے ہوئےکہا ہے کہ ہماری نظرمیں منشیات کی اسمگلنگ حرام ہے،یہاں تک اگرہم اسےصہیونی حکومت کوبھی فروخت کریں۔ حزب اللہ لبنان ، اس ملک کے کسی بھی معاشی اورسرمایہ کاری کےمنصوبے میں شریک نہیں ہے۔ بنابریں منشیات کی اسمگلنگ پرمبنی امریکی الزامات بےبنیاد ہیں۔

حزب اللہ لبنان کے سیکرٹری جنرل نےمزید کہا ہےکہ حزب اللہ نےاس تحریک کے کسی بھی شخص کو اس تحریک کے نام پرسرمایہ کاری کرنےکا مشن نہیں دیا ہے۔ حزب اللہ نےثابت کردیا ہے کہ وہ دہشتگردی کے ساتھ لڑنے والا اہم ترین گروہ ہے۔امریکہ اپنےان حالیہ الزامات کے ذریعےیہ ثابت کرنا چاہتا ہےکہ حزب اللہ ایک دہشتگرد تنظیم ہے۔ میں امریکہ کی وزارت قانون سےمطالبہ کرتا ہوں کہ وہ لبنان میں آکرتحقیق کرے اورمیں امید کرتا ہوں کہ لبنانی حکام ہمارے خلاف کوئی منفی اقدام نہیں کریں گے۔

انہوں نےخطے میں صہیونی حکومت کےمشکوک اقدامات کی طرف اشارہ کرتے ہوئےکہا ہے کہ اسلامی مزاحمت، اپنی حکومت اورفوج کے ساتھ کھڑی رہےگی اور وہ مقبوضہ فلسطین کے سرحدی علاقوں میں ہرقسم کی تبدیلی کےمخالف ہے۔ لبنان، اسرائیلی حخومت کے ساتھ ہرقسم کے تعلقات معمول پرنہ لانےکا پابند ہے۔ اسرائیل کے ساتھ تیرہ متنازعہ سرحدی علاقے موجود ہیں۔

انہوں نے لبنان کے آئندہ انتخابات کی طرف اشارہ کرتے ہوئےکہا ہے کہ ہم اپنی بھرپورطاقت کے ساتھ انتخابات کےمرحلے میں داخل ہوچکے ہیں ۔ لبنان میں غالب اورمغلوب نام کی کوئی چیز حکومت نہیں کرتی ہے اورکسی کو اس ملک میں گوشہ نشین کرنا صحیح نہیں ہے۔

سید حسن نصراللہ نے آخرمیں کہا ہےکہ عراق اورشام میں امریکی فوجیوں کے باقی رہنے پرمبنی امریکی بیانیہ، اس ملک کی منافقت پردلالت کرتا ہے، امریکیوں نے خود داعش کو تشکیل دیا تھا تاکہ خطےبالخصوص عراق میں واپس آنے کا بہانہ بنا سکیں۔

683468

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

آیت اللہ سیدمحمد حسینی ہمدانی:

اسلامی بیداری،بیت المقدس کی آزادی اورنئےاسلامی تمدن کی تشکیل کا سبب بنےگی

خبررساں ایجنسی شبستان:ایران کے صوبہ البرز کےاسلامی انقلاب کی کامیابی کی چالیسویں سال کی اسٹریٹجک اورپالیسی ساز کونسل کے سربراہ نےکہا ہےکہ بیداری اسلامی بیت المقدس کی آزادی اورنئےاسلامی تمدن کی تشکیل کا سبب بنے گی۔

منتخب خبریں