خبرگزاری شبستان

پنج شنبه ۶ اردیبهشت ۱۳۹۷

الخميس ١١ شعبان ١٤٣٩

Thursday, April 26, 2018

وقت :   Tuesday, February 13, 2018 خبر کوڈ : 71463
قائد انقلاب اسلامی:
ایران میں شیعہ اورسنی سخت ترین میدانوں میں ایک دوسرے کےساتھ کھڑے ہیں
خبررساں ایجنسی شبستان: قائد انقلاب اسلامی نےصوبہ کردستان اورگلستان کی طرح سیستان وبلوچستان کو بھی اسلامی وحدت کا مظہراوردنیا کے سامنے شیعہ اورسنی اخوت تعاون کا آئیڈیل قراردیتے ہوئےکہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران میں شیعہ اورسنی دشوارترین حالات میں ایک دوسرے کے ساتھ کھڑے ہیں۔

خبررساں ایجنسی شبستان نے قائد انقلاب اسلامی کے دفترکی سائٹ کے حوالےسےنقل کیا ہےکہ 5فروری کو صوبہ سیستان وبلوچستان کے شہداء کی کانفرنس کی انتظامیہ سےملاقات کے دوران قائد انقلاب اسلامی نےجوکچھ فرمایا تھا وہ آج زاہدان میں منعقد ہونے والے سیمینارمیں نشرہوا ہے۔

حضرت آیت اللہ خامنہ ای نےاس ملاقات میں صوبہ سیستان وبلوچستان کی عوام سےاپنےگہرے عشق ومحبت کی طرف اشارہ کیا ہے اوربلوچی عوام کو گرم، بامحبت اورباصلاحیت قراردیتےہوئےکہا ہے کہ اتنی صلاحیتوں کے باوجود قاجار اورپہلوی حکومتوں کے دوران اس صوبے کی عوام پرتوجہ نہیں دی جاتی تھی جس کی وجہ سے اس صوبے کے لوگوں کی صلاحیتیں کھل کرسامنے نہیں آسکی ہیں۔

انہوں نےاسلامی انقلاب کے بعد اس علاقے میں ہونے والےکاموں کو لوگوں اورنظام کی دوطرفہ محبت کی علامت قراردیا ہے اوراس صوبےکے گورنرکی جانب سے پیش ہونے والی ضروریات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ میٹھے پانی اورریلوے لائن جیسی ضروریات کےلیے حکمرانوں کے سامنے اپنے مطالبات پیش کریں اورنجی شعبوں اورقومی ترقی فنڈ جیسےذخائرسے استفادہ کرتے ہوئے اپنی ضروریات کو پورا کرنے کی کوشش کریں۔

قائد انقلاب اسلامی نےصوبہ کردستان اورگلستان کی طرح سیستان وبلوچستان کو بھی اسلامی وحدت کا مظہر اوردنیا کے سامنے شیعہ اورسنی اخوت تعاون کا آئیڈیل قراردیتے ہوئےکہا ہےکہ اسلامی جمہوریہ ایران میں شیعہ اورسنی دشوارترین حالات میں ایک دوسرے کے ساتھ کھڑے ہیں اورانہوں نے دشمنوں کی سازشوں کےمقابلےمیں بیداری اوربصیرت کی ضرورت پرزوردیتے ہوئےکہا ہے کہ مقدس دفاع کے دوران ایک سنی نوجوان کی شہادت اورانقلاب دشمن افرا دکے ہاتھوں اسلامی انقلاب کے دفاع  کی وجہ سے ایک سنی مولوی کی شہادت سے معلوم ہوتا ہےکہ اسلامی جمہوریہ ایران میں شیعہ اورسنی دشوارترین میدانوں میں ایک دوسرے کے ساتھ کھڑے ہیں لہذا ثقافتی اورآرٹ جیسے اقدامات کے ذریعے ان حقائق اورحقیقی وحدت کو مجسم کرنا چاہیے۔

حضرت آیت اللہ خامنہ ای نے دشمنوں کی عسکری اورثقافتی سازشوں اورپابندیوں کے باوجود ماڈرن جہالت کےمقابلےمیں اسلامی جمہوریہ ایران کی استقامت کو لوگوں کے ایمان اوران کی قربانی کی طاقت کے مرہون منت قراردیتے ہوئےکہا ہے کہ ایمان اوراستقامت کے انتہائی اہم سلسلے میں پختہ ایمان کا مکمل مظہرشہداء اورجان کی قربانی دینے والے ہیں۔ بنابریں اسلامی نظام کو شہداء کی عزت واحترام کی ضرورت ہے۔

689384

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

آیت اللہ مکارم شیرازی:

ٹیلیگرام کا مالک امریکہ اورصہیونزم کا ایجنٹ ہے

خبررساں ایجنسی شبستان: آیت اللہ مکارم شیرازی نےسوشل نیٹ ورک ٹیلیگرام کی طرف اشارہ کرتے ہوئےکہا ہےکہ اس نیٹ ورک کا مالک روس کا رہنے والا یہودی ہےکہ جو امریکیوں اورصہیونیوں کے حکم پرعمل کرتا ہے۔

منتخب خبریں