خبرگزاری شبستان

چهارشنبه ۳۰ خرداد ۱۳۹۷

الأربعاء ٧ شوّال ١٤٣٩

Wednesday, June 20, 2018

وقت :   Saturday, March 10, 2018 خبر کوڈ : 71768

کیا ظہورکے بعد حضرت فاطمہ(س) رجعت کریں گی؟
خبررساں ایجنسی شبستان:(۔ ۔ ۔ جب فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا آئیں گی تو آپ اپنےاوراپنےشوہرکے اوپرہونے والے ظلم وستم، فدک کےغصب ہونے اوراس بارے میں مہاجرین اورانصارکے درمیان جانے اورخطبہ دینےکے بارے میں شکایت کریں گی۔ ۔ ۔)

خبررساں ایجنسی شبستان نےصوبہ تہران کے مہدی موعود(عج) نامی ثقافتی فاونڈیشن کےحوالے سے نقل کیا ہےکہ احادیث کی کتب میں ایک ایسی حدیث موجود ہےکہ جو امام زمانہ علیہ السلام کے ظہور کےبعد حضرت زہرا سلام اللہ علیہا کی رجعت کو بیان کرتی ہے۔ امام صادق علیہ السلام کی ایک حدیث میں آیا ہے:

مفضل کہتا ہےکہ میں نے امام جعفرصادق علیہ السلام سے پوچھا: مولا کیا پیغمبراکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اورامام علی علیہ السلام بھی حضرت قائم عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کے ساتھ ہوں گے؟ آپ نے فرمایا: جی ہاں، اللہ کی قسم پیغمبراکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اورعلی علیہ السلام بھی دوبارہ اس زمین پرقدم رکھیں گے ۔ ۔ ۔اے مفضل گویا میں دیکھ رہا ہوں کہ ہم ائمہ علیہم السلام اس وقت پیغمبراکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کےسامنے جمع ہیں اورآپ سے شکایت کررہے ہیں کہ آپ کی امت نے ہمارے ساتھ کیسا سلوک کیا ہے اورہم کہیں گےکہ امت نے ہمیں جھٹلایا تھا، ہم سےلاپرواہی کی، ہم سےنفرت کی اورہمیں قتل کی دھمکیاں دیں، ان کے ظالم بادشاہوں نےہمیں اپنے وطن سے نکال کراپنے مراکز حکومت میں لےگئے اورہم میں سے بعض کو زہراوربعض کو قید خانے میں شہید کردیا۔ اس وقت پیغمبربہت زیادہ گریہ کرتے ہوئے فرمائیں گے اے میرے بیٹو جو مصیبتیں تم پرآئی ہیں اس سے کہیں زیادہ تمہارے جد پربھی نازل ہوئی ہیں۔

اس وقت حضرت فاطمہ سلام اللہ علیہا آئیں گی اور تو آپ اپنے اوراپنے شوہرکے اوپرہونے والے ظلم وستم، فدک کےغصب ہونے اوراس بارے میں مہاجرین اورانصارکے درمیان جانےاورخطبہ دینے کے بارے میں شکایت کریں گی۔ پھرفرمائیں گی کہ کس طرح کچھ افراد بیعت لینےکےلیے امیرالمومنین علیہ السلام کو گھرسےسقیفہ بنی ساعدہ میں لے کرگئے تھے۔(1)

بنابریں اس روایت کے مطابق حضرت فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا بھی رجعت کرنے والوں میں شامل ہوں گی۔

«قَالَ الْمُفَضَّلُ یَا سَیِّدِی‏...ثُمَّ تَبْتَدِئُ فَاطِمَة(ع) وَ تَشْکُو مَا نَالَهَا مِنْ أَبِی بَکْرٍ وَ عُمَرَ وَ أَخْذِ فَدَکَ مِنْهَا وَ مَشْیِهَا إِلَیْهِ فِی مَجْمَعٍ مِنَ الْمُهَاجِرِینَ وَ الْأَنْصَارِ وَ خِطَابِهَا لَهُ فِی أَمْرِ فَدَکَ وَ مَا رَدَّ عَلَیْهَا مِنْ قَوْلِهِ إِنَّ الْأَنْبِیَاءَ لَا تُورَثُ وَ احْتِجَاجِهَا بِقَوْلِ زَکَرِیَّا وَ یَحْیَى ع وَ قِصَّةِ دَاوُدَ وَ سُلَیْمَانَ ع وَ قَوْلِ عُمَرَ هَاتِی صَحِیفَتَکِ الَّتِی ذَکَرْتِ أَنَّ أَبَاکِ کَتَبَهَا لَکِ وَ إِخْرَاجِهَا الصَّحِیفَةَ وَ أَخْذِهِ إِیَّاهَا مِنْهَا وَ نَشْرِهِ لَهَا عَلَى رُءُوسِ الْأَشْهَادِ مِنْ قُرَیْشٍ وَ الْمُهَاجِرِینَ وَ الْأَنْصَارِ وَ سَائِرِ الْعَرَبِ وَ تَفْلِهِ فِیهَا وَ تَمْزِیقِهِ إِیَّاهَا وَ بُکَائِهَا وَ رُجُوعِهَا إِلَى قَبْرِ أَبِیهَا رَسُولِ اللَّهِ ص بَاکِیَةً حَزِینَةً تَمْشِی عَلَى الرَّمْضَاءِ قَدْ أَقْلَقَتْهَا وَ اسْتِغَاثَتِهَا بِاللَّهِ وَ بِأَبِیهَا رَسُولِ اللَّهِ (ص) وَ تَمَثُّلِهَا بِقَوْلِ رُقَیْقَةَ بِنْتِ صَیْفِی‏ ...».

(1) مجلسی، محمد باقر، بحار الانوار، ج 53، ص 17، مؤسسة الوفاء، بیروت، 1409ق؛ دوانى، على، مهدى موعود، (ترجمه ج 51، بحار الأنوار)، ص 1166- 1167، اسلامیه، تهران، چاپ بیست و هشتم، 1378ش،

692107

 

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

ڈاکٹر حسن روحانی:

قطر سے تعلقات کے فروغ میں کوئی رکاوٹ نہیں ہے

سیاسی: اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر نے ایران اور قطر کے تعلقات میں بہتری کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا قطر سے بہتر تعلقات میں کوئی رکاوٹ نہیں ہے کیونکہ قطر ہمارا ہمسایہ ملک ہے اور ہم ہمیشہ قطر کے ساتھ کھڑے ہیں۔

منتخب خبریں