خبرگزاری شبستان

جمعه ۲۹ تیر ۱۳۹۷

الجمعة ٨ ذو القعدة ١٤٣٩

Friday, July 20, 2018

وقت :   Monday, March 19, 2018 خبر کوڈ : 71889
سید محسن حکیم:
عراق اپنے ہمسائیوں کےساتھ معتدل روابط قائم کرنے کے درپے ہے
خبررساں ایجنسی شبستان: عراق کے ایک سیاسی کارکن اورقومی حکمت گروہ کے رکن نے اس مطلب کہ عراق کی موجودہ حکومت کی خارجہ پالیسی اس پرقائم ہے کہ وہ اپنے تمام ہمسائیوں کے ساتھ معتدل اوراچھے روابط قائم کرے ،کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ البتہ ان ہمسائیوں کے درمیان ایران کا ایک خاص مقام ہے۔

خبررساں ایجنسی شبستان کی رپورٹ کے مطابق عراق،اسلامی جمہوریہ ایران کا ایک ہمسایہ ملک ہے کہ صدام حسین کا تختہ الٹنے کے بعد طرفین کے درمیان ایک خاص قسم کے روابط کا سلسلہ جاری ہے۔

سید محسن حکیم نےمزید کہا ہےکہ عراق کی موجودہ حکومت کی خارجہ پالیسی یہ ہے کہ وہ اپنے تمام ہمسایہ ممالک کے ساتھ معتدل اوراچھے روابط قائم کرے۔ سعودی عرب کے ساتھ ہماری 812 کلومیٹر کی مشترکہ سرحد ہے اورعراقی حکومت کا یہ نظریہ ہےکہ قبائلی، تاریخی اورجغرافیائی روابط کے پیش نظراسے تمام ممالک کے ساتھ ارتباط قائم کرنے کی ضرورت ہے خواہ وہ ایران ہویا ترکی، اردن ہو یا کویت ہو۔

البتہ عراق کے ہمسائیوں کے درمیان اسلامی جمہوریہ ایران کو ایک خاص مقام حاصل ہے کہ جو دونوں ممالک کے درمیان سیاسی شخصیات کی آمد ورفت سےمکمل طورپرواضح ہے۔ لیکن اس کے باوجود عراقی حکومت کا نظریہ ہےکہ اپنے ہمسائیوں کے ساتھ مضبوط روابط ہونے چاہییں اور سعودی عرب بھی اس قانون سے الگ نہیں ہےاورعراق کے وزیراعظم حیدرالعبادی نے بھی سعودی عرب کا دورہ کیا ہےکہ جو البتہ ایک ثقافتی دورہ تھا کہ جس میں طرفین کے درمیان ثقافتی امورمیں تعاون کے موضوع پربات چیت کی گئی تھی کیونکہ آپ جانتے ہیں کہ بہت سےعراقی، حج اورعمرہ کے لیے سعودی عرب جاتے رہتے ہیں اوریہ کوئی یک طرفہ ارتباط نہیں ہے کیونکہ سعودی عرب کے بعض شیعہ بھی مقدس مقامات کی زیارت کے لیے عراق میں آتے رہتے ہیں۔

696720

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

آیت اللہ خاتمی:

اس وقت تہران میں چادرشعائراللہ کی تعظیم کا مصداق ہے

خبررساں ایجنسی شبستان: آیت اللہ خاتمی نےشیعوں کی خصوصی مناسبتوں کےبارے میں کہا ہے کہ اتنی زیادہ عزت وقدردانی کا راز یہ ہےکہ اہل بیت علیہم السلام کہیں فراموش نہ ہوجائیں، درحقیقت ہمارے ائمہ ہمارے لیے نمونہ عمل ہیں لہذا ان پرتوجہ دینی چاہیے۔

منتخب خبریں