خبرگزاری شبستان

چهارشنبه ۴ مهر ۱۳۹۷

الأربعاء ١٦ المحرّم ١٤٤٠

Wednesday, September 26, 2018

وقت :   Monday, April 16, 2018 خبر کوڈ : 72045
بہرام قاسمی:
عرب لیگ کا اپنی توانائیوں کو باطل اوربیہودہ الزامات پرخرچ کرنا افسوسناک ہے
خبررساں ایجنسی شبستان: ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نےعرب لیگ کے سربراہوں کے اجلاس کےآخری بیانیے پراپنے ردعمل کا اظہارکرتے ہوئے دیگرممالک کے اندرونی امورمیں مداخلت نہ کرنے پرمبنی ایران کی اصولی اورمستقل سیاست کی ضرورت پرزوردیتے ہوئے اس بیانیےکی بعض شقوں میں ایران پرلگائے جانےو الے الزامات کو مسترد کردیا ہے۔

خبررساں ایجنسی شبستان نے وزارت خارجہ کے حوالے سے نقل کیا ہےکہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان بہرام قاسمی نے عرب لیگ کے سربراہوں کے اجلاس کےآخری بیانیے پراپنے ردعمل کا اظہارکرتے ہوئے دیگرممالک کے اندرونی امورمیں مداخلت نہ کرنے پرمبنی ایران کی اصولی اوردائمی سیاست کی ضرورت پرزوردیتے ہوئے اس بیانیے کی بعض شقوں میں ایران پرلگائے جانےو الے الزامات کو مسترد کردیا ہے۔

انہوں نےعرب لیگ کےسربراہوں کے اجلاس کےآخری بیانیے پراپنےگہرے افسوس کا اظہارکرتے ہوئےکہا ہےکہ سابقہ بیانیوں کی طرح یہ بیانیہ بھی اسلامی جمہوریہ ایران کےخلاف بے فائدہ اوبیہودہ  دعووں کی تکرارہے جبکہ وہ خطےکےموجودہ بحرانوں کےاسباب اورحقائق کی دقیق شناخت سے چشم پوشی کی جارہی ہے اورغلط راستے کو ترجیح دی جارہی ہے۔

قاسمی نےمزید کہا ہےکہ یہ انتہائی افسوسناک بات ہےکہ عرب لیگ کے رکن بعض ممالک تاریخی اورجٖغرافیائی حقائق پراپنی آنکھیں بند کرکے اپنے ہمسائیوں کی حاکمیت کےحق سےچشم پوشی کرتے ہوئےعقلمندی پرمبنی پالیسیوں کی پیروی نہیں کرتے ہیں اورمسلمہ تاریخی حقائق کو الٹا پیش کرکےعربی اوراسلامی ممالک کی بالقوۃ صلاحیتوں کو بیہودہ خرچ کررہے ہیں۔

انہوں نے آخرمیں کہا ہےکہ اسلامی جمہوریہ ایران نے ہمیشہ ہی دیگرممالک کی حاکمیت کے حق اوراپنے ہمسائیوں کے حقوق کےاحترام کی ضرورت پرزوردیا ہے۔ لہذا وہ امید کرتا ہےکہ خطے کے ممالک بھی ایک دوسرے کےامورمیں مداخلت نہ کرتے ہوئے بے بنیاد اوربیہودہ الزامات اوردعووں کی تکرارنہ کریں۔

699619

 

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

حجت الاسلام صادقی:

حضرت امام زمان(عج) کی حضرت علی اکبر(ع) سے شباہت

حجت الاسلام صادقی نے کہا حضرت علی اکبر(ع) کی خصوصیات میں سے ہے کہ ہمیشہ حالت جنگ میں رہتے تھے اور اس سے بڑھ کر اور کوئی چیز نہیں ہے کہ انسان اپنے زمانے کے امام کی شناخت کے بعد اپنی جان کو اپنے امام کیلئے قربان کرے۔

منتخب خبریں