خبرگزاری شبستان

دوشنبه ۲۲ مهر ۱۳۹۸

الاثنين ١٥ صفر ١٤٤١

Monday, October 14, 2019

وقت :   Saturday, April 21, 2018 خبر کوڈ : 72082

حضرت ابوالفضل(ع) کے باب الحوائج ہونےکا راز
خبررساں ایجنسی شبستان: امام سجاد علیہ السلام فرماتے ہیں: حضرت عباس علیہ السلام نے اپنے بھائی پراپنی جان قربان کردی اوراللہ تعالیٰ نےاس کام کےبدلے میں انہیں جنت میں دو پرعطا کیے ہیں تاکہ وہ قیامت تک فرشتوں کے ساتھ پروازکریں، تمام شہداء کے درمیان آپ کا مقام بہت بلند ہے اورتمام شہداء آپ پررشک کرتے ہیں۔

علوم ومعارف قرآن کریم یونیورسٹی کے شعبہ تعلیم وتحقیق کے مشیرحجۃ الاسلام سید محمد نقیب زادہ نے خبررساں ایجنسی شبستان کے نامہ نگارسےگفتگو کے دوران حضرت عباس علیہ السلام کی ولادت باسعادت کی مناسبت سے آپ کے طرززندگی کی خصوصیات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ حضرت عباس علیہ السلام کے لیے بیان ہونے والی کچھ خصوصیات کا تعلق ان کے والد گرامی حضرت امیرالمومنین امام علی علیہ السلام سے ہے کیونکہ آپ نے چودہ سال امیرالمومنین علیہ السلام کے ساتھ گزارے تھے اورجنگ صفین میں آپ کی رکاب میں جنگ بھی کی تھی۔

انہوں نے حضرت عباس علیہ السلام کی ظاہری خصوصیات کی طرف اشارہ کرتے ہوئےکہا ہے کہ مرحوم مجلسی نے بحارالانوارمیں اس ظاہری صفات کو بیان کرتے ہوئے لکھا ہے کہ آپ قمربنی ہاشم کے لقب سے معروف تھے کیونکہ آپ جسمانی اورظاہری لحاظ سےبہت زیادہ خوبصورت تھے۔

حجۃ الاسلام نقیب زادہ نے حضرت ابوالفضل العباس علیہ السلام کی اخلاقی اورذاتی خصوصیات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ امام کے بیٹے اوربھائی ہونے کےعلاوہ آپ خود بھی ایک خاص علمی مقام رکھتے تھے جیسا کہ تاریخ میں آپ کے لیے فقیہ کا عنوان ذکر ہوا ہے:«وَ قَدْ کانَ مِن فُقَهاءِ أَوْلادِ الائمّه)

انہوں نےمزید کہا ہےکہ حضرت عباس علیہ السلام بہت زیادہ بہادراورجنگجو تھے اورآپ نے کربلا کی جنگ میں محاصرے میں ہونے کے باوجود اسی افراد کا ہلاک کیا تھا۔ امام حسین علیہ السلام نے حضرت عباس علیہ السلام کی شہادت کے بعد فرمایا تھا: وہ آنکھیں جو گزشتہ رات تک تمہارے خوف سے سو نہیں سکتی تھیں آج وہ چین سے سوئیں گی۔ یہ آپ کی شجاعت اوررعب ودبدبے کی علامت ہے۔

انہوں نے ادب اوراحترام کو حضرت عباس علیہ السلام کی ایک اورخصوصیت بتاتے ہوئے کہا ہے کہ جب سید الشہداء علیہ السلام نے شب عاشور کو اپنے تمام ساتھیوں کو جمع کرکے فرمایا کہ میں نے تم سے اپنی بیعت اٹھالی ہے لہذا رات کی تاریکی سےاستفادہ کرتے ہوئے جہاں جانا چاہتے ہو چلے جاو۔ تاریخی نقل کے مطابق سب سے پہلے جس نے کہا: کہاں جائیں؟ وہ حضرت عباس علیہ السلام تھے کہ آپ نے فرمایا: ہم آپ کے بعد کس طرح زندگی گزاریں؟ہم آپ کے بعد چند دن اورزندہ رہیں؟

انہوں نے بصیرت کے مالک ہونےکو حضرت عباس علیہ السلام کی ایک اورخصوصیات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ بصیرت کا مطلب یہ ہے کہ انسان مسائل کی گہرائی کو سمجھے۔ لہذا حضرت عباس علیہ السلام کی زیارت نامہ میں پڑھتے ہیں: «أَشْهَدُ أَنَّكَ قَدْ بَالَغْتَ فِي النَّصِيحَةِ وَ اَدَّیْتَ الامانَةَ)

انہوں نے آخرمیں کہا ہےکہ جب شمرملعون حضرت عباس علیہ السلام کے لیےامان نامہ لےکرآیا تو آپ نے اسے سختی سے جواب دیا کہ جو بصیرت کی علامت ہے۔ آپ کی ایک اورخصوصیت یہ تھی کہ آپ عبادت پربہت زیادہ توجہ دیتے تھے اورروایات کی بنا پرآپ کی پیشانی پر سجدے کے نشان پڑے ہوئے تھے۔

700174

 

 

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز

سماجی: اسلامی جمہوریہ ایران کے شہر بندرعباس میں 8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز ہوچکا ہے جس میں دنیا بھر سے مسلمان دانشور، علماء، مفکرین اور عمائدین شرکت کررہے ہیں۔

منتخب خبریں