خبرگزاری شبستان

سه شنبه ۱ آیان ۱۳۹۷

الثلاثاء ١٣ صفر ١٤٤٠

Tuesday, October 23, 2018

وقت :   Saturday, April 21, 2018 خبر کوڈ : 72084

حضرت عباس(ع) کی زندگی انتظارکا عملی نمونہ
خبررساں ایجنسی شبستان: ہم حضرت حجت علیہ السلام کےمنتظراگراپنےاندرحضرت عباس علیہ السلام کی اخلاقی اورمعرفتی صفات کو پیدا کرلیں تو ہم نیک لوگوں کے معاشرے کو تشکیل دے کر حضرت بقیۃ اللہ عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کی کریمہ حکومت کی تشکیل کے ظہورکی جانب حرکت کرسکتے ہیں۔

مہدویت کےمحقق حجۃ الاسلام سید احمد موسوی نےخبررساں ایجنسی شبستان کے نامہ نگارسے گفتگو کے دوران حضرت عباس علیہ السلام کے طرزندگی میں انتظارکے دروس کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ائمہ معصومین علیہم السلام کی روایات اورآپ کے زیارت نامہ میں حضرت عباس علیہ السلام کی ممتاز اورنمایاں شخصیت کو بیان کیا گیا ہے اوراگرہم اپنے آپ کو ان صفات سے آراستہ کرلیں تو ہم بھی کامیاب زندگی گزارسکتے ہیں۔

انہوں نےحضرت عباس علیہ السلام کے زیارت نامہ کے کچھ فرازوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ زیارت نامہ آپ کے تعارف کا بہترین ذریعہ ہے۔ اس زیارت نامہ کی ابتداء میں آیا ہے:«َسَلامُ اللَّهِ وَ سَلامُ مَلائِكَتِهِ الْمُقَرَّبِينَ وَ أَنْبِيَائِهِ الْمُرْسَلِينَ وَ عِبَادِهِ الصَّالِحِينَ....» اس فراز سے یہ سمجھا جاسکتا ہےکہ یہ سلام ایک خاص معنیٰ رکھتے ہیں کہ جو اللہ اوراس کے نیک بندوں کی طرف سے ہے۔ اس کے ذریعے حضرت عباس علیہ السلام کی اخلاقی اورذاتی ممتاز خصوصیات کو پہچانا جاسکتا ہے۔

انہوں نے تسلیم، تصدیق اوروفا کو حضرت عباس علیہ السلام کی خصوصیات شمارکرتے ہوئے کہا ہے کہ قمربنی ہاشم علیہ السلام نے سخت ترین لمحات میں بھی امام حسین علیہ السلام کو تنہا نہیں چھوڑا تھا ، اگرچہ شب عاشور کو دشمن کی جانب سے آپ کے لیے امان نامہ لایا گیا تھا لیکن آپ امام حسین علیہ السلام سے جدا ہونےکےلیے تیارنہ ہوئے اورزندگی کے آخری لمحات تک ولایت کے راستے پرگامزن رہے۔

حجۃ الاسلام سید موسوی نے کہا ہےکہ حضرت عباس علیہ السلام کسی چون وچرا کےبغیراپنے زمانے کےامام کی اطاعت کرتے تھے اوریہی خصوصیات ان منتظرین کے لیے بھی نمونہ عمل بن سکتی ہیں کہ جو غیبت کے زمانے میں حضرت حجت علیہ السلام کی اطاعت کے راستے پرگامزن ہیں۔

انہوں نے مزید کہا ہےکہ ہم دعائے ندبہ میں امام زمانہ عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کی خدمت میں عرض کرتے ہیں:«بِأبى أَنْتُمْ وَ اُمّى وَ أهْلى وَ مالى» جبکہ حضرت عباس علیہ السلام، امام حسین علیہ السلام کے سامنے اس عبارت کا ایک واضح نمونہ تھے اورآپ نے انتہائی ادب اورتواضع اوروفاداری کے ساتھ امام حسین علیہ السلام پراپنی جان قربانی کردی تھی۔

مہدویت کےاس محقق نےآخرمیں حضرت عباس علیہ السلام کے مقام ومنزلت کے بارے میں امام صادق علیہ السلام کی ایک روایت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہےکہ آپ نے فرمایا:«کان عمنا العباس نافذ البصيرة صلب الايمان جاهد مع أبي عبد الله الحسين و مضي شهيدا»، بنابریں امام زمانہ علیہ السلام کے منتظرین بھی اگرحضرت عباس علیہ السلام کی اخلاقی، معرفتی اورکرداری خصوصیات کو اپنا لیں تو وہ عبادالصالحون کے معاشرے کو تشکیل دے کرحضرت بقیۃ اللہ عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کی کریمہ حکومت کی تشکیل کی راہ ہموارکرسکتے ہیں۔

700658

 

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز

سماجی: اسلامی جمہوریہ ایران کے شہر بندرعباس میں 8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز ہوچکا ہے جس میں دنیا بھر سے مسلمان دانشور، علماء، مفکرین اور عمائدین شرکت کررہے ہیں۔

منتخب خبریں