خبرگزاری شبستان

دوشنبه ۲۶ آذر ۱۳۹۷

الاثنين ٩ ربيع الثاني ١٤٤٠

Monday, December 17, 2018

وقت :   Saturday, May 26, 2018 خبر کوڈ : 72419
سید حسن نصراللہ:
خطےکےتمام حالات، مزاحمت کےحق میں ہیں
خبررساں ایجنسی شبستان: حزب اللہ لبنان کےسیکرٹری جنرل نےکہا ہےکہ دہشتگردانہ فہرست جاری کرکےمزاحمت کو گھٹنےٹیکنے پرمجبورنہیں کیا جاسکتا ہے اوراس قسم کی جنگیں، شکست سے دوچارہوں گی۔

خبررساں ایجنسی شبسان نے العالم کے حوالے سے نقل کیا ہےکہ حزب اللہ لبنان کے سیکرٹری جنرل سید حسن نصراللہ نےمزاحمت کی کامیابی اورجنوب لبنان کی آزادی کی اٹھارویں سالگرہ کی مناسبت سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہےکہ بیت المقدس میں رونما ہونے والے واقعات کے پیش نظر اس سال عالمی یوم القدس کےمظاہروں میں نمایاں فرق ہونا چاہیے۔

انہوں نے مزید کہا ہےکہ اسلامی جمہوریہ ایران اورشام نے۲۰۰۰ء میں آزادی کے تحقق کے لیے علاقائی اوربین الاقوامی سطح پرلبنانی عوام کی مدد کی تھی اوراسی طرح مجاہدین، شہداء ،زخمی مجاہدین ، حریت پسندوں اورعام لوگوں نے بھی مزاحمت کی کامیابی میں اہم کردارادا کیا تھا۔

سید حسن نصراللہ نےکہا ہےکہ اللہ تعالیٰ نے لبنانی عوام اورمزاحمت کے بیٹوں کو یہ کامیابی عطا کی ہے کیونکہ وہ اس کے لائق تھے اورطاقت اورقدرت کی نابرابری کے باوجود مزاحمت کو کامیابی اورلبنان کو آزادی حاصل ہوئی تھی۔

انہوں نے واضح کہا ہےکہ اس فتح اورکامیابی کے تجربے نےثابت کردیا ہےکہ دشمن اپنے اوراپنی فوج پراعتماد کھو بیٹھا ہےاوراس نےپسپائی اختیارکی ہے۔

حزب اللہ کے سیکرٹری جنرل نےمزید کہا ہےکہ ہم نے کئی مرتبہ کہا ہےاورآج بھی اس کی تکراکرتےہیں کہ ہم جنگ نہیں چاہتے ہیں تاہم ہم جنگ سےڈرتے بھی نہیں ہیں اورجب ہم مستقبل کی کسی جنگ کی بات کرتے ہیں تو یقینا کامیابی کی بات کرتے ہیں کیونکہ اللہ ہمارے ساتھ ہےاور ہماری عوام اورمجاہدین میدان جنگ میں حاضر ہے۔

انہوں نےمزاحمت کےخلاف امریکی پابندیوں کی مختلف صورتوں کی طرف اشارہ کرتےہوئےکہا ہے کہ ان میں سے صورت دہشتگردانہ فہرست ہے۔ جو چیزامریکہ کی اس پابندیوں میں ناراض کرنے والی ہے وہ لوگوں کو نقصان پہنچنا ہےکہ جس سے معلوم ہوتا ہےکہ یہ پابندیاں بے بنیاد ہیں۔

سید حسن نصراللہ نے مزید کہا ہےکہ ہمارے ناموں کو  امریکہ اورعربی دہشتگرانہ فہرست میں شامل کیا گیا ہے تاکہ ہمارے ساتھ ارتباط رکھنے والوں کو ہم سے دورکیا جاسکے اوران اقدامات کا مقصد یورپ اورآفریقہ میں مزاحمت کے حامیوں سے انتقام لینا ہے۔

انہوں نے کہا ہےکہ اس سے قبل بھی امریکہ اورسعودی عرب کی جانب سے شائع ہونے والی دہشتگرانہ فہرست میں حزب اللہ کے قائدین کے نام شامل تھے لیکن اس مرتبہ ایک نئی فہرست شائع کی گئی ہے لیکن میرے اورمیرے کچھ دیگربھائیوں پرتو اس کا کوئی مادی اثرنہیں پڑے گا کیونکہ ہمارے  پاس تو پیسے نہیں ہیں کہ انہیں بینکوں میں رکھیں لہذا ان پابندیوں کا مقصد لوگوں کو ہم سے دورکرنا ہے۔

انہوں نے مزید کہا ہےکہ مزاحمت کے مالی منابع کو ختم کرنےکےلیےاسلامی جمہوریہ ایران پردباو ڈالا جارہا ہے تاکہ وہ مزاحمت کی مدد نہ کرسکیں۔ بنابریں مزاحمت کو نشانہ بنانا اس جنگ کا ایک حصہ ہے۔

سید حسن نصراللہ نے کہا ہےکہ مزاحمت کے خلاف اقدامات ہمارے عوام کےعزم کو کمزورنہیں  کرتے ہیں اسی بنا پرمیں امریکہ، صہیونی حکومت اوران کے آلہ کاروں سےکہتا ہوں کہ آپ مزاحمت اوراس کی حقیقت کو سمجھنےمیں غلطی کررہے ہیں، مزاحمت کم نہیں ہوگی بلکہ قربانی کے ذریعے کامیابی متحقق ہوگی۔

انہوں نےمزید کہا ہےکہ خطےاورلبنان کی مزاحمت،کسی کی آلہ کارنہیں ہےبلکہ یہ اپنا ہدف اورعقیدہ رکھتی ہے اوراس پرایمان رکھتی ہے اوروہ اس کے لیے قربانی دینے کے لیےتیار ہے۔ حزب اللہ نے آشکارا طورپرشام میں دہشتگردوں کا مقابلہ کیا ہےجبکہ امریکہ نے شامی حکومت کا تختہ الٹنے کے لیے تمام دہشتگردوں کو جمع کرلیا تھا لیکن جیسا کہ میں نےکہا ہے کہ شام کے اتحادی ہرگز شام کو تباہ ہونےکی اجازت نہیں دیں گے۔

قابل ذکر ہے کہ ۲۵مئی  کو اسلامی مزاحمت کی کامیابی کی مناسبت سے لبنان میں جشن منایا جارہا ہے۔

۷۰۷۴۸۵

 

 

 

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز

سماجی: اسلامی جمہوریہ ایران کے شہر بندرعباس میں 8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز ہوچکا ہے جس میں دنیا بھر سے مسلمان دانشور، علماء، مفکرین اور عمائدین شرکت کررہے ہیں۔

منتخب خبریں