خبرگزاری شبستان

سه شنبه ۳ مهر ۱۳۹۷

الثلاثاء ١٥ المحرّم ١٤٤٠

Tuesday, September 25, 2018

وقت :   Wednesday, May 30, 2018 خبر کوڈ : 72483

دعائےافتتاح میں امام زمانہ(عج) کی حکومت کےعالمی ہونےکے رازکا انکشاف
خبررساں ایجنسی شبستان: روایت میں ہےکہ جب امام زمانہ عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف ظہورکریں گےتو اس وقت لوگوں کےدلوں سے بغض وکینہ نکل جائے گا اوردل پاکیزہ ہوجائیں گے یعنی آپ اپنے ظہورکےذریعے کسی خاص سرزمین اورقبیلے کو فتح نہیں کریں گے بلکہ دلوں کی فتح کے ساتھ عالمی برادری کو اپنے ساتھ ملائیں گے۔

حوزہ ویونیورسٹی کےاستاد حجۃ الاسلام سید مجتبیٰ معنوی نے خبررساں ایجنسی شبستان کے نامہ نگارسے گفتگو کے دوران دعائے افتتاح کی اہمیت کے بارے میں کہا ہےکہ اس دعا کے ایک فراز میں آیا ہے:(اللّهُمَّ اَعِزَّهُ وَاَعْزِزْ بِهِ وَانْصُرْهُ وَانْتَصِرْ بِهِ وَانْصُرْهُ نَصْرا عَزیزا وَافْتَحْ لَهُ فَتْحاً یَسیراً وَاجْعَلْ لَهُ مِنْ لَدُنْکَ سُلْطاناً نَصیراً)۔ دعا کےاس فراز میں اللہ کی سنتوں میں سے ایک اورسنت یعنی باطل پرحق کی فتح اوراللہ کے صالح بندوں کہ جن کے سرفہرست امام زمانہ عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کی نصرت اورمدد کی طرف اشارہ کیا گیا ہے۔

انہوں نے امام زمانہ عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کی حکومت کو ایک الہی حتمی وعدہ قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ حکومت ایک حتمی وعدہ ہونےکےعلاوہ حتمی کامیابی کو بھی شامل ہوتا ہے لیکن یہ کہ حضرت حجت علیہ السلام کس طرح کامیاب ہوں گے اوران کی حکومت اورامامت کس طرح عالمی ہوگی،ایک ایسا موضوع ہےکہ جو ہمیشہ سے ہی متکلمین اورفلاسفہ کے درمیان زیربحث رہا ہے۔

حجۃ الاسلام معنوی نےمزید کہا ہےکہ اللہ تعالیٰ نے تمام انبیاء اوراولیائے الہی میں سےحضرت یوسف علیہ السلام کو عزیز کےعنوان سے یاد کیا ہے۔امام زمانہ علیہ السلام کی حضرت یوسف علیہ السلام سے مشابہت کی ایک وجہ یہ ہے کہ حضرت یوسف علیہ السلام بھی عزت کے ساتھ اس مقام پرپہنچے تھے اوراس کی وجہ یہ تھی کہ وہ  عالم اورامین تھے۔ قرآن کریم میں ان کی شان میں آیا ہے:«اجْعَلْنِي عَلَى خَزَائِنِ الْأَرْضِ إِنِّي حَفِيظٌ عَلِيمٌ)۔

انہوں نے کہا ہےکہ امام زمانہ علیہ السلام بھی عالم اورامین ہیں اورآپ کی عالمی حکومت بھی عزت کے ساتھ قائم ہوگی۔ جیسا کہ روایات کی تعبیرکےمطابق عصرظہورمیں معاشرہ اپنی سماجی بلوغ کی انتہا تک پہنچ جائے گا اورلوگ انبیاء اوراولیائےالہی بالخصوص امام زمانہ علیہ السلام کے نزدیک اپنی سعادت تک پہنچنے کا راستہ پائیں گے۔

مہدویت کےمحقق نےمزید کہا ہےکہ اس دعا کے ایک اورفراز میں ہم پڑھتے ہیں:«وَانْصُرْهُ وَانْتَصِرْ) ان کی مدد کرو اوران کے وسیلے سے دوسروں کی مدد کرو۔ جب لوگ اس عزت کا مشاہدہ کریں گے اور اپنی فطرت کے ساتھ سازگار امام عصرعلیہ السلام کے اہداف کو سمجھ جائیں گےتو ان کی وجہ سے اپنی کھوئی ہوئی عزت کو پالیں گے تو وہ امام زمانہ علیہ السلام کی نصرت کریں گے۔

انہوں نے کہا ہےکہ دعائے افتتاح ہمیں اس نکتےکی طرف متوجہ کرتی ہے کہ امام زمانہ علیہ السلام کو اللہ تعالیٰ کی نصرت حاصل ہوگی اوراس کے دو پیغام ہیں: ایک یہ کہ امام زمانہ علیہ السلام کے ساتھ تمام دشمنیوں کو کچل دیا جائے گا اوردشمن جتنے بھی آپ کےخلاف جنگ کریں گے اورآپ کی مخالفت کریں گےاس کو کوئی نتیجہ بھی نہیں نکلےگا ۔ دوسرا پیغام یہ ہے کہ دشمن، امام مہدی علیہ السلام کے ساتھ جنگ میں کامیاب نہیں ہوں گے کیونکہ امامت اورمہدویت کو اللہ تعالیٰ کی عنایت حاصل ہے اوراللہ تعالیٰ لوگوں کو امام زمانہ علیہ السلام تک پہنچنے اوران کا ساتھ دینے میں مدد کرے گا۔

۷۰۷۵۵۳

 

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

حجت الاسلام صادقی:

حضرت امام زمان(عج) کی حضرت علی اکبر(ع) سے شباہت

حجت الاسلام صادقی نے کہا حضرت علی اکبر(ع) کی خصوصیات میں سے ہے کہ ہمیشہ حالت جنگ میں رہتے تھے اور اس سے بڑھ کر اور کوئی چیز نہیں ہے کہ انسان اپنے زمانے کے امام کی شناخت کے بعد اپنی جان کو اپنے امام کیلئے قربان کرے۔

منتخب خبریں