خبرگزاری شبستان

چهارشنبه ۴ مهر ۱۳۹۷

الأربعاء ١٦ المحرّم ١٤٤٠

Wednesday, September 26, 2018

وقت :   Tuesday, June 19, 2018 خبر کوڈ : 72588
آیت اللہ جوادی آملی:
علوی علوم کی ترویج کی ضرورت ہے
خبررساں ایجنسی شبستان: آیت اللہ جوادی آملی نےکہا ہےکہ ہمیشہ اپنے سامنے ابدی موجود کے بارے میں فکرکرنےکی کوشش کرنی چاہیےاوراپنےلیے زاد راہ فراہم کرنا چاہیے اوریہ چیز قرآن کریم اورنہج البلاغہ سے انس اورمحبت سےحاصل ہوتی ہے۔

خبررساں ایجنسی شبستان شعبہ قم نےاسراء سائٹ کےحوالے سےنقل کیا ہےکہ کاشان یونیورسٹی کے علمی بورڈ کے اراکین اوربعض اساتذہ نے اسراء وحیانی علوم بین الاقوامی فاونڈیشن میں حاضرہوکر آیت اللہ عبداللہ جوادی آملی سےملاقات کی ہے۔

آیت اللہ جوادی آملی نےاس ملاقات میں کاشان شہرکے تاریخی اورثقافتی درخشندہ ماضی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کاشان کی سرزمین میں غیاث الدین جمشید کاشانی اورملامحسن فیض کاشانی جیسی عالمی شخصیات کی تربیت کرنےکی صلاحیت موجود ہے۔ یہ ایک عظیم نعمت ہے کہ جسے اللہ تعالیٰ نے تمہیں عطا کیا ہے جبکہ اللہ نے انسان کو جو نعمت بھی عطا کی ہے وہ اس نعمت پرجوابدہ ہے۔ لہذا اگرکوئی ثقافت اورفکرکے میدان سےمربوط ہو تو اس پرذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ اس نعمت کےمقابلے میں اپنی ترقی اورکمال پرخصوصی توجہ دے۔

انہوں نے نہج البلاغہ کےحفاظ اورشارحین کی تربیت میں کاشان شہرکےماضی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہےکہ تاریخ میں کسی نے بھی حضرت علی علیہ السلام کی طرح یہ دعویٰ نہیں کیا ہے کہ جو کچھ پوچھنا چاہتے ہو مجھ سے پوچھ لو۔ بنابریں حوزہ ہائےعلمیہ اوریونیورسٹیز اور بالخصوص کاشان کے آپ دانشوروں پریہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ آپ سب سے پہلے علوی علوم کو اچھی طرح سمجھیں، اس پرعمل کریں اورپھراس کی ترویج کریں۔

حوزہ علمیہ قم کے اس ناموراستاد نےمزید کہا ہےکہ نہج البلاغہ کا ایک بہت بڑا حصہ، قرآن کریم کی تفسیرہے؛درحقیقت نہج البلاغہ اورصحیٖفہ سجادیہ، قرآن کریم کے ترجمان ہیں۔ امیرالمومنین علیہ السلام اسی نہج البلاغہ میں قرآنی کلام کی تفسیرکرتے ہوئے فرماتے ہیں کہ جب آپ موت کا سامنا کرتے ہیں تو خود مرنےکی بجائے موت کو ماردیتےہو،آپ اس جلد سے باہرنکل آتے ہیں اورفنا نہیں ہوتے ہیں۔

انہوں نےآخرمیں کہا ہےکہ اگرکہا گیا ہےکہ (حب الوطن من الایمان) تو مومن کا حقیقی وطن وہ مقام ہےکہ جہاں سےآیا ہے اوروہ لقاء اللہ کا مقام ہے۔ ہمیشہ اس ابدیت کی فکرکرنے اورزاد راہ فراہم کرنے کی کوشش کریں جبکہ یہ چیز قرآن کریم اورنہج البلاغہ سے انس اورمحبت سے حاصل ہوتی ہے۔

۷۱۱۵۶۴

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

حجت الاسلام صادقی:

حضرت امام زمان(عج) کی حضرت علی اکبر(ع) سے شباہت

حجت الاسلام صادقی نے کہا حضرت علی اکبر(ع) کی خصوصیات میں سے ہے کہ ہمیشہ حالت جنگ میں رہتے تھے اور اس سے بڑھ کر اور کوئی چیز نہیں ہے کہ انسان اپنے زمانے کے امام کی شناخت کے بعد اپنی جان کو اپنے امام کیلئے قربان کرے۔

منتخب خبریں