خبرگزاری شبستان

دوشنبه ۲۶ آذر ۱۳۹۷

الاثنين ٩ ربيع الثاني ١٤٤٠

Monday, December 17, 2018

وقت :   Saturday, July 07, 2018 خبر کوڈ : 72661

اولیاءاللہ کی قبروں سےتوسل اورتبرک اسلامی سنت ہےیا شیعوں کی بدعت؟
خبررساں ایجنسی شبستان: تاریخی اعتبار سےثابت ہےکہ لوگ پیغمبراکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اورحضرت حمزہ بلکہ پورے مدینےکی پاکیزہ خاک کو تبرک کے طورپراٹھایا کرتےتھے اورروایات میں بھی آیا ہے کہ مدینہ کی خاک ہردرد کی دوا اورکوڑھ اورسردرد کی دوا ہے۔

خبررساں ایجنسی شبستان کی رپورٹ کے مطابق گمراہ فرقے وہابیت نےجس ایک مسئلے کو بہانہ بنا کر تشیع کی حقانیت پراعتراض کررکھے ہیں وہ پیغمبراکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم، اہل بیت علیہم السلام، اولیاء اورصلحاء کی قبروں کی زیارت کرنےکا عقیدہ رکھنا ہے۔ البتہ اس دوران اس مسئلے کے بارے میں اہل سنت کے مذاہب کے علماء کا نقطہ وہابیت کےاس اعتراض کا بہترین جواب ہے کہ جو ثابت کرتا ہےکہ اولیائے الہی کے قبروں سے تبرک اورتوسل کرنا شیعوں کی بدعت نہیں ہے۔

یہاں پر حنبلی مذہب کے سربراہ احمد بن حنبل، رملی شافعی، محب الدین طبری، مکہ کے ایک بزرگ عالم دین ابوالصیف یمانی، زرقانی مالکی اورعزامی شافعی اورکچھ دوسرے علماء کے اقوال کو نقل کرتے ہیں:

۱۔ احمد بن حنبل کے بیٹےعبداللہ کہتے ہیں: میں نے اپنے باپ سے پوچھا: رسول اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کےمنبرکو مس کرنا اوراسی طرح آنحضرت کی قبرشریف کو بوسہ دینےاوراس سے تبرک حاصل کرنےکا کیا حکم ہے؟ تو میرے باپ نے کہا: اس میں کوئی مشکل نہیں ہے۔ (الجامع في العلل و معرفة الرجال ، ج2 ، ص32 ؛ وفاءالوفا ، ج4 ، ص1414)

۲۔ رملی شافعی کہتےہیں: پیغمبراکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم، علماء اوراولیاء کی قبورسے توسل اور تبرک کرنا جائز ہےاوراسے چومنےمیں کوئی مشکل نہیں ہے۔.(كنز المطالب، ص219)

۳۔ محب الدین طبری شافعی کہتے ہیں: قبرکو چومنا اوراس پرہاتھ رکھنا جائز ہےاورعلماء اورصالحین کی سیرت بھی یہی ہے۔ (اسني المطالب، ج1 ، ص331)

۴۔ تاریخی اعتبارسےبھی ثابت ہےکہ لوگ پیغمبراکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اورحضرت حمزہ بلکہ پورے مدینےکی پاکیزہ خا ک کو تبرک کےطورپراٹھایا کرتےتھے اورروایات میں بھی آیا ہے کہ مدینہ کی خاک ہردرد کی دوا اورکوڑھ اورسردرد کی دوا ہے۔

زرکشی کہتے ہیں: حضرت حمزہ کی قبر کی خاک اٹھانے کو حرمین کی خاک  سے مستثنیٰ کیا گیا ہے کیونکہ سب کے نزدیک یہ بات متفقہ طورپرثابت ہے کہ یہ خاک سردرد کے علاج کے لیے بہت مفید ہے۔ (وفاء الوفا، ج1 ، ص69)

ابوسلمہ نےپیغمبراکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے نقل کیا ہے کہ:«غُبارُ الْمَدِينَةِ يُطْفِي الْجذام)

ابن اثیرجزری نےپیغمبراکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے نقل کیا ہے:«وَالَّذي نَفْسِي بِيَدِهِ إنَّ في غُبارِها شِفاءٌ مِنْ كُلِّ داءٍ) قسم ہےاس ذات کی کہ جس کے قبضہ قدرت میں میری جان ہےمدینہ کی گردوخاک میں ہردرد کے لیےشفا ہے۔

سمھودی لکھتے ہیں: صحابہ اوردوسرے افراد کا طریقہ کار یہ تھا کہ وہ پیغمبراکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی قبرمطہر کی خاک اٹھاکےلےجایا کرتے تھے۔ (وفاء الوفا، ج1 ، ص544)

نجم الدین مروجی طبسی، حضرت ولی عصر(عج) تحقیقاتی انسٹی ٹیوٹ کے گروہ اعتراضات کے جوابات۔

۷۱۴۶۸۴

 

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز

سماجی: اسلامی جمہوریہ ایران کے شہر بندرعباس میں 8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز ہوچکا ہے جس میں دنیا بھر سے مسلمان دانشور، علماء، مفکرین اور عمائدین شرکت کررہے ہیں۔

منتخب خبریں