خبرگزاری شبستان

دوشنبه ۲۵ تیر ۱۳۹۷

الاثنين ٤ ذو القعدة ١٤٣٩

Monday, July 16, 2018

وقت :   Saturday, July 07, 2018 خبر کوڈ : 72665
آیت اللہ مجتبیٰ تہرانی:
موت کے وقت انسان کی برزخی آنکھ کھل جاتی ہے
خبررساں ایجنسی شبستان: موت کے وقت انسان کی برزخی آنکھ کھل جاتی ہے۔ اس وقت انسان دیکھتا ہےکہ اس کی کیا صورتحال ہے۔ جب وہ اس دنیا سے جاتا ہے تو سمجھ جاتا ہے کہ انسان کی صورت میں جارہا ہے یا حیوان کی صورت میں۔

خبررساں ایجنسی شبستان کی رپورٹ کے مطابق ہماری بحث یہاں پرپہنچی تھی کہ اولاد، اپنے والدین کا ورثہ ہے اوراس کی بقاء سے والدین کی بقاء ہے۔ دوسری جانب اولاد ایک الہی امانت ہے۔ایک مرتبہ کہا جاتا ہےکہ اولاد خود ایک ورثہ ہے اورایک مرتبہ آپ خود اس کےلیےورثہ چھوڑنا چاہتے ہیں۔اب اولاد کےلیے کونسی چیز ورثہ کے طورپرچھوڑنا بہتر ہے یقینا وہی چیز بہترہوگی کہ جو دنی اورآخرت میں اس کے کام آئے۔ امام صادق علیہ السلام اولاد کے لیے ورثہ چھوڑنے کے حوالے سے فرماتے ہیں:(إِنَّ خَیرَ ما وَرَّثَ الآباءُ لِبنائِهِم الأَدَب لَا المال فَإِنَّ المالَ یَذهَبُ وَ الأَدَبُ یَبقَی) بتحقیق والدین اپنی اولاد کے لیے جو بہترین چیزورثہ میں چھوڑتے ہیں وہ ادب ہے نہ کہ مال۔ کیونکہ مال ختم ہوجاتا ہے جبکہ ادب باقی رہتا ہے۔ امام صادق علیہ السلام اس حدیث میں مال اورادب میں فرق بیان کررہے ہیں۔ اس کے بعداس کی وجہ بھی بیان کرتے ہیں کہ کیوںکہ مال ختم ہونے والا ہے جبکہ ادب ختم نہیں ہوتا ہے۔ کیونکہ ادب انسان کے وجودی اورروحانی حصے کو بناتا ہے اورہمارا برزخی وجود بھی قیامت تک اسی وجودی ڈھانچے میں ہوتا ہے۔ آپ کسی کے باطن کو تو نہیں دیکھ سکتے۔ آپ کی برزخی آنکھ تو کھل نہیں ہےکہ سمجھ سکو کہ اس کے باطن میں کیا چیز ہے۔ ہرکسی کی اپنی ایک مخصوص شکل ہے۔ ممکن ہےکہ انسان کا باطن  ایک درندہ بھیڑیا ہو۔ البتہ موت کے وقت انسان کی برزخی آنکھ کھل جاتی ہے۔( فَبَصَرکَ الیَومَ حَدیِدٌ) آج تمہاری آنکھ تیزہوگئی ہے یعنی تم ہرچیز کی حقیقت کو دیکھتے ہو۔ اس وقت انسان دیکھ سکتا ہے کہ وہ اس کی کیفیت کیسی ہے۔ جب وہ اس دنیا سے جاتا ہے تو اسے سمجھ آتی ہےکہ انسان بن کرجارہا ہےیا حیوان۔ قیامت کے بارے میں بھی ہے : (وَ إِذَا الْوُحُوشُ حُشِرَت) جب وحشی حیوانات اٹھائے جائیں گے۔ پس یہ ادب ہے کہ جو ہرانسان کے وجود کو بناتا ہے۔ یعنی یہ ادب ہے کہ جو باعث بنتا ہےکہ ایک شخص الہی انسان کی شکل وصورت میں آجائے۔

۷۱۴۱۷۸

 

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

مساجد سے مربوطہ فعال شخصیات کو دینی اور سیاسی طور پر متقی ہونا چاہئے

ایران کے ادارہ امور مساجد کے سرپرست نے کہا: مساجد سے مربوطہ فعال شخصیات کو دینی اور سیاسی طور پر متقی ہونا چاہئے۔

منتخب خبریں