خبرگزاری شبستان

سه شنبه ۲۰ آذر ۱۳۹۷

الثلاثاء ٣ ربيع الثاني ١٤٤٠

Tuesday, December 11, 2018

وقت :   Tuesday, July 17, 2018 خبر کوڈ : 72772
عراق میں حکومت مخالف مظاہروں کی حقیقت:
آیا عراق ان مسائل سے نکل پائے گا یا حالات مزید بدتر ہونگے!؟
عراقی عوام نے منجملہ عراقی جنوبی صوبوں کے ملک میں معیشتی ترقی اور حکومتی ڈھانچے میں اصلاحات کےلئے وسیع پیمانے پر مظاہروں کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے۔

خبر رساں ایجنسی شبستان نے " الجزیرہ" کے حوالے سے خبر شائع کی ہے کہ ابھی عراقی انتخابات کہ اکثر لوگ جسے عراق میں دہشتگردوں کی شکست کے بعد ایک بہترین راہِ حل کے طور پر جان رہے تھے کو کچھ عرصہ ہی گذرا تھا کہ بصرہ اور جنوبہ صوبوں میں حکومت مخالف مظاہروں کا آغاز ہو گیا کہ جس سے عراقی داخلی و خارجہ پالیسیوں پر بھی بہت سے سوالات نے جنم لیا۔

سال ۲۰۰۹ء کے بعد سے عراق میں حکومت مخالف مظاہروں میں واضح کمی دیکھنے کو آئی تھی کہ اکثر لوگوں کی نگاہ میں اس کی اصلی وجہ امریکی سامراج سے رہائی اور عراق میں سیاسی استحکام کا آنا تھا۔

بصرہ اور دوسرے علاقوں میں ان مظاہروں کی وجہ حکومت کی طرف سے عدم ِ تعاون، پانی اور بجلی کی کمی، بے روزگاری اور رہائش کا بحران بتایا جا رہا ہے۔

عراقی انتخابات کے بعد یہ خیال کیا جا رہا تھا کہ ملک میں امنیت اور سکون کی فضا قائم ہو گی  لیکن بدقسمتی سے ان شدید مظاہروں نے اس ملک میں  ایک نئی مشکل ایجاد کر دی ہےچونکہ عراق کے اکثر شہروں میں ۵۰ درجے کی گرمی ہے اور اوپر سے بجلی کا نظام بھی گڑبڑ ہے حتی پینے کے صاف پانی کی بھی انتہائی کمی کا سامنا ہے۔

حکومت عراق نے صوبہ بصرہ کے لئے  جو کہ ملک عراق کے امیر صوبوں میں شمار کیا جاتا ہےصاف پینے کے پانی کے لئے ۲ ارب دینار  کی منظوری دی اور اسی طرح ۱۰ ہزار ملازمتوں کی بھی یقین دہانی کرائی ہے لیکن حکومت پھر بھی ان مظاہروں کو روکنے میں ناکام رہی ہے۔

715987

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز

سماجی: اسلامی جمہوریہ ایران کے شہر بندرعباس میں 8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز ہوچکا ہے جس میں دنیا بھر سے مسلمان دانشور، علماء، مفکرین اور عمائدین شرکت کررہے ہیں۔

منتخب خبریں