خبرگزاری شبستان

سه شنبه ۲۰ آذر ۱۳۹۷

الثلاثاء ٣ ربيع الثاني ١٤٤٠

Tuesday, December 11, 2018

وقت :   Monday, July 30, 2018 خبر کوڈ : 72963

حضرت مہدی(عج) کےلیے(قائم) کا لقب کس نےانتخاب کیا تھا؟
خبررساں ایجنسی شبستان: ابوحمزہ ثمالی سےنقل ہوا ہے کہ انہوں نےامام باقرعلیہ السلام سے پوچھا: یابن رسول اللہ(ص) کیا آپ سارے ائمہ حق کےلیے قیام کرنے والے نہیں ہیں؟ امام علیہ السلام نے فرمایا: بالکل ایسا ہی ہے۔ میں نے عرض کیا: پس بارہویں امام علیہ السلام کو کیوں قائم کہا جاتا ہے؟ ۔ ۔ ۔

خبررساں ایجنسی شبستان نےحضرت ولی عصر(عج) نامی تحقیقاتی انسٹی ٹیوٹ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ مہدویت کےمیدان میں ایک رائج ترین سوال حضرت امام مہدی علیہ السلام کےالقاب اور اسماء کے بارے میں ہیں۔ جیسا کہ آیا ہے: کس نے حضرت امام مہدی علیہ السلام کے لیے (قائم) کا لقب انتخاب کیا ہے؟

اس سوال کےجواب میں آیا ہے: لغت میں(قائم) کا معنی قیام کرنے والا ہے۔ لیکن اصطلاح میں یہ نام کیوں امام زمانہ علیہ السلام سے مختص ہے؟ ایک ایسا سوال ہےکہ شیعوں نےائمہ علیہم السلام سے اس کےبارے میں پوچھا ہے۔

ابوحمزہ ثمالی سے نقل ہے کہ انہوں نے امام باقرعلیہ السلام سے پوچھا: یابن رسول اللہ(ص) کیا آپ سارے ائمہ حق کےلیےقیام کرنےوالےنہیں ہیں؟ امام علیہ السلام نے فرمایا: بالکل ایسا ہی ہے۔ میں نے عرض کیا: پس بارہویں امام علیہ السلام کو کیوں قائم کہا جاتا ہے؟ تو آپ نے فرمایا: «لَمَّا قُتِلَ جَدِّی الْحُسَینُ صَلَّی اللَّهُ عَلَیهِ ضَجَّتِ الْمَلَائِکَهُ إِلَی اللَّهِ عَزَّ وَجَلَّ بِالْبُکَاءِ وَالنَّحِیبِ وَقَالُوا: إِلَهَنَا وَسَیدَنَا أَتَغْفَلُ عَمَّنْ قَتَلَ صَفْوَتَکَ وَابْنَ صَفْوَتِکَ وَخِیرَتَکَ مِنْ خَلْقِکَ؟ فَأَوْحَی اللَّهُ عَزَّ وَجَلَّ إِلَیهِمْ: قَرُّوا مَلَائِکَتِی فَوَ عِزَّتِی وَجَلَالِی لَأَنْتَقِمَنَّ مِنْهُمْ وَلَوْ بَعْدَ حِینٍ، ثُمَّ کَشَفَ اللَّهُ عَزَّ وَجَلَّ عَنِ الْأَئِمَّهِ مِنْ وُلْدِ الْحُسَینِ علیه السلام لِلْمَلَائِکَهِ فَسَرَّتِ الْمَلَائِکَهُ بِذَلِکَ فَإِذَا أَحَدُهُمْ قَائِمٌ یصَلِّی، فَقَالَ اللَّهُ عَزَّ وَجَلَّ: بِذَلِکَ الْقَائِمِ أَنْتَقِمُ مِنْهُمْ»؛(1)

جب میرے جد حسین علیہ السلام شہید ہوئے توفرشتوں نےاللہ کی بارگاہ میں گریہ وزاری کرتے ہوئے عرض کیا: اے ہمارے خدا اورمولا؛ کیا تواپنے برگزیدہ اوربرگزیدہ کے بیٹےکو شہید کرنے والوں کو معاف کردے گا، وہ تیری مخلوقات میں سے بہترین ہے؟اللہ تعالی نے انہیں وحی فرمائی: اے میرے فرشتو، آرام سے رہو۔ مجھےاپنی عزت وجلالت کی قسم میں یقینا ان سےانتقام لوں گا اگرچہ کچھ مدت گزرجانےکے بعد۔ پھراللہ تعالیٰ نےامام حسین علیہ السلام کی نسل کے ائمہ کو ان کے سامنے ظاہرکیا تو فرشتے خوش ہوگئے۔ لیکن انہوں نے دیکھا کہ ان میں سےایک امام کھڑے ہوکرنماز پڑھ رہا ہے تو اللہ نے فرمایا: اس قائم کے ذریعے میں ان سے انتقام لوں گا۔

قائم اورمہدی سےکیا مراد ہے؟

مرحوم شیخ طوسی نےنقل کیا ہےکہ ابوسعید خراسانی کہتے ہیں کہ میں نے امام صادق علیہ السلام کی خدمت میں عرض کیا: کیا مہدی اورقائم ایک ہی شخص کے دونام ہیں؟ آپ نےفرمایا: جی ہاں۔ میں نےعرض کیا: انہیں مہدی کیوں کہا جاتا ہے؟ امام صادق علیہ السلام نے فرمایا:«لِأَنَّهُ یهْدَی إِلَی کُلِّ أَمْرٍ خَفِی وَسُمِّی الْقَائِمَ لِأَنَّهُ یقُومُ بَعْدَ مَا یمُوتُ إِنَّهُ یقُومُ بِأَمْرِ عَظِیمٍ»؛(2) کیونکہ وہ ہرمخفی کام اورامرکے ہدایت یافتہ ہوں گے اورانہیں قائم اس لیےکہا جاتا ہے چونکہ وہ ایک عظیم موضوع کے لیے قیام کریں گے۔

قائم اورمنتظَر سےکیا مراد ہے؟

مرحوم شیخ صدوق نقل کرتے ہیں کہ صقربن دلف نامی ائمہ اطہارعلیہم السلام کےایک صحابی کہتے ہیں کہ میں نےامام جواد علیہ السلام سے سنا کی آپ نے فرمایا: میرے بعد میرے بیٹے علی امام ہیں اوران کے بعد ان کے بیٹےحسن امام ہیں۔ پھرخاموش ہوگئے۔ میں نےعرض کیا: ان کے بعد کون امام ہے؟ امام جواد علیہ السلام نے سخت گریہ کرتے ہوئے فرمایا:«إِنَّ مِنْ بَعْدِ الْحَسَنِ ابْنَهُ الْقَائِمَ بِالْحَقِّ الْمُنْتَظَرَ. فَقُلْتُ لَهُ: یا ابْنَ رَسُولِ اللَّهِ وَ لِمَ سُمِّی الْقَائِمَ؟ قَالَ: لِأَنَّهُ یقُومُ بَعْدَ مَوْتِ ذِکْرِهِ وَارْتِدَادِ أَکْثَرِ الْقَائِلِینَ بِإِمَامَتِهِ. فَقُلْتُ لَهُ: وَلِمَ سُمِّی الْمُنْتَظَرَ؟ قَالَ: لِأَنَّ لَهُ غَیبَهً تَکْثُرُ أَیامُهَا وَیطُولُ أَمَدُهَا فَینْتَظِرُ خُرُوجَهُ الْمخْلِصُونَ وَینْکِرُهُ الْمُرْتَابُونَ وَیسْتَهْزِئُ بِذِکْرِهِ الْجَاحِدُونَ وَ یکْثُرُ فِیهَا الْوَقَّاتُونَ وَیهْلِکُ فِیهَا الْمُسْتَعْجِلُونَ وَینْجُو فِیهَا الْمُسْلِمُونَ»؛(3) حسن کے بعد ان کے بیٹے حق کے لیے قائم کرنے والے اورمنتظرامام ہوں گے۔

میں نےعرض کیا: یابن رسول اللہ ، انہیں قائم کیوں کہا جاتا ہے؟ آپ نے فرمایا:چونکہ فراموش ہونے کے بعد وہ قیام کریں گےیعنی بہت سےلوگ ان کی امامت سےمنہ موڑلیں گے۔ میں نےعرض کیا: انہیں منتظَر کیوں کہا جاتا ہے؟ آپ نے فرمایا: چونکہ ان کی غیبت  کی مدت بہت طولانی ہوگی۔ لہذا مخلص افراد ان کے ظہورکےمنتظرہوں گے؛ لیکن شک وتردید کرنے والےان کا انکار کریں گے اور منکرین ان کا مذاق اڑائیں گے۔ بہت سے افراد اس سے سستی کریں گے اورکچھ لوگ جلدبازی کریں گے تو وہ ہلاک ہوجائیں گے لیکن حقیقی مسلمان نجات پیدا کریں گے۔

۷۱۸۹۲۰

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز

سماجی: اسلامی جمہوریہ ایران کے شہر بندرعباس میں 8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز ہوچکا ہے جس میں دنیا بھر سے مسلمان دانشور، علماء، مفکرین اور عمائدین شرکت کررہے ہیں۔

منتخب خبریں