خبرگزاری شبستان

سه شنبه ۲۹ مرداد ۱۳۹۸

الثلاثاء ١٩ ذو الحجّة ١٤٤٠

Tuesday, August 20, 2019

وقت :   Tuesday, July 31, 2018 خبر کوڈ : 72970

ٹرمپ کا تہران کے ساتھ بچگانہ کھیل
خبررساں ایجنسی شبستان: ٹرمپ اپنےخیالی قصوں کا کمزوراورناتوان ہیروبننا چاہتا ہےجبکہ وہ اس بات سے غافل ہے کہ اب سب لوگ سمجھ چکے ہیں کہ وہ جھوٹا چرواہا ہے۔

خبررساں ایجنسی شبستان کی رپورٹ کےمطابق ایک مرتبہ پھرٹرمپ اورپھراس کی داستان کہ وہ ہیرو بننا چاہتا ہے۔ایک ایسا صدر کہ جو سیاست کی الف با سے واقف نہیں ہے اوراسےفقط  ایک بچگانہ کھیل سمجھتا ہےکہ جس طرح ہوسکےاس میں کامیاب ہوجائے۔

ٹوئیٹر پراپنی شدید ترین دھمکیوں کے بعد امریکی صدر نےاب گزشتہ ہفتےاعلان کیا ہے کہ وہ بغیرکسی شرط کےایرانی صدرحسن روحانی سمیت ایرانی حکام سے گفتگو کرنے کے لیے تیارہے۔ یہ وہی کام ہے کہ جو ٹرمپ نے شمالی کوریا کے ساتھ کیا تھا۔ ابتداء میں اس ملک کو جنگ کی دھمکی دیتا رہا ہے اورپھراس کے ساتھ ملاقات اورگفتگو کا پروگرام بنایا تھا تاکہ سب کے سامنے ثابت کرسکے کہ وہ مشکلات کو حل کرنےکےلیےآیا ہے!

ٹرمپ نے شمالی کوریا کے رہبر کے ساتھ ملاقات کے فورا بعد امریکی عوام سےکہا تھا کہ اب یہ ملک امریکیوں کے لیےخطرہ شمارنہیں ہوتا ہے۔ اس نے اس وجہ سے یہ بات کی تاکہ وہ اپنے آپ کو ہیرو ثابت کرسکے جبکہ وہ اس بات سے غافل تھا کہ وہ شمالی کوریا کے ساتھ کھیل میں شکست کھا چکا ہے۔

اسی طرح کا واقعہ روس کے ساتھ ہوا۔ ٹرمپ نے ابتداء میں اپنی متنازعہ گفتگو میں ماسکو پرامریکی صدارتی انتخابات میں مداخلت کا الزام لگا یا تھا اورپھراس کےخلاف خوب پروپیگنڈہ کیا تھا جبکہ ہلسینگی کی نشست میں ٹرمپ نے روسی صدرولادیمیرپیوٹن کے سامنے کلی طورپراپنے موقف کو تبدیل کردیا تھا تاکہ ایک مرتبہ پھر وہ اچھا آدمی بننےکی کوشش کرسکے۔ اس نشست کے بعد ٹرمپ کو  اپنی بڑی جماعتوں کی جانب سے سخت تنقید کرنا سامنا کرنا پڑا کہ جس کے جواب میں وہ  فقط یہ جملہ کہہ سکا: مجھ سےغلطی ہوگئی ہے!

اس وقت ایران کے ساتھ بھی یہی عمل کررہا ہے۔ ٹرمپ نے اٹلی کے وزیراعظم کے ساتھ اپنی ایک پریس کانفرنس میں اعلان کیا ہے کہ وہ بغیرکسی شرط کے ایران کے ساتھ گفتگو کرنےکے لیےتیار ہے۔ یہ ایک ایسا جملہ ہے کہ جس کی کوئی بنیاد اوراساس نہیں ہے۔ ٹرامپ اب جھوٹے چرواہے میں تبدیل ہوچکا ہے اوراب کوئی بھی اس کی باتوں پر اہمیت نہیں دیتا ہے کیونکہ ایرانی حکام اوران کے معاونین نے ٹرمپ کے بیانات کو سنجیدگی سے نہیں لیا ہے۔ اس بیان کے بعد پمپئو نے ٹرمپ کے بیانات کے بالعکس ایران کے ساتھ گفتگو کے لیے شرائظ کی ایک فہرست پیش کردی ہے۔

قابل ذکرہےکہ اگر ٹرمپ اپنی پالیسیوں میں اسی طرح عمل کرتا رہا تو عنقریب صہیونی حکومت کے علاوہ وہ اپنے ملکی اورغیرملکی حامیوں کو کھو دے گا۔

۷۱۹۱۶۷

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز

سماجی: اسلامی جمہوریہ ایران کے شہر بندرعباس میں 8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز ہوچکا ہے جس میں دنیا بھر سے مسلمان دانشور، علماء، مفکرین اور عمائدین شرکت کررہے ہیں۔

منتخب خبریں