خبرگزاری شبستان

شنبه ۲۸ مهر ۱۳۹۷

السبت ١٠ صفر ١٤٤٠

Saturday, October 20, 2018

وقت :   Wednesday, August 01, 2018 خبر کوڈ : 72993

شیعہ ہرشب بدھ کو مسجد سہلہ میں کیوں جاتے ہیں؟
خبررساں ایجنسی شبستان: سید بن طاووس ہرشب بدھ کو مسجدسہلہ کی زیارت کے لیے جایا کرتے تھے اورکہا کرتے تھے کہ اگرآپ بھی مسجد سہلہ میں جانا چاہتے ہیں تو شب بدھ کو نمازمغرب اور عشاء کے درمیان جائیں کیونکہ یہ وقت دیگرتمام اوقات پرفضیلت رکھتا ہے۔

خبررساں ایجنسی شبستان کی رپورٹ کے مطابق مسجد سہلہ ایک بہت مشہورمسجد ہے اوریہ امام زمانہ علیہ السلام کے ظہورکےبعد ان کی اوران کے اہل خانہ کی رہائش گاہ ہوگی اوراسی طرھ  بیت المال کو جمع کرنے اورمسلمانوں کے درمیان غنائم تقسیم کرنےکا مکان ہوگی۔ یہ مسجد کوفہ میں واقع ہے کہ جو مسجد کوفہ کے بعد بنائی گئی تھی۔ اس مسجد کےمختلف نام ہیں: جیسے مسجد قرا، مسجد بری، مسجد سھیل، مسجد عبد قبیس اورمسجد بنی ظفر لیکن سہلہ دیگرتمام ناموں سے زیادہ مشہور ہے۔

امیرالمومنین امام علی علیہ السلام کی ایک روایت کی وجہ سےاس مسجد کو مسجد قرا بھی کہا جاتا ہے اوروہ روایت یہ ہے کہ شہرکوفہ میں چارمقدس مقامات موجود ہیں کہ جو مساجد ہیں۔ آپ سے ان کے ناموں کے بارے میں پوچھا گیا تو آپ نےفرمایا: ان میں سےایک مسجد سہلہ ہے۔ یہ مسجد خضر نبی علیہ السلام کی رہائش گاہ ہے اورجو شخص بھی غم واندہ کے ساتھ اس مسجد میں داخل ہوتا ہے اللہ تعالیٰ اس کےغم واندہ کو دورکرتا ہے اورہم اہل بیت علیہم السلام مسجد سہلہ کو مسجد قرا کے نام سے یاد کرتے ہیں۔(۱)

مسجد سہلہ، مسجد کوفہ کے بعد ایک مقدس ترین مکان شمارہوتا ہے کیونکہ یہ حضرت ادریس علیہ السلام، حضرت ابراہیم علیہ السلام اورخضرنبی علیہ السلام کے گھربھی اسی مسجد میں تھے۔(۲)  اس مسجد کی اہمیت کے بارے میں ائمہ معصومین علیہم السلام سے بہت زیادہ روایات نقل ہوئی ہیں۔ امیرالمومنین امام علیہ السلام سے روایت ہے کہ آپ نے فرمایا: مسجد ابن ظفرایک بابرکت مسجد ہے۔ اللہ کی قسم اس مسجد کے اوپروالے طبقوں میں سےایک طبقہ (آسمان ) میں سبزرنگ کا ایک بہت بڑا پتھر ہے کہ اللہ تعالیٰ نے جس پرتمام انبیاء کے چہروں کی تصاویربنا رکھی ہیں اوریہ مسجد وہی مسجد سہلہ ہے۔(۳)

ہمارے بزرگ علماء نے ہمیں ہمیشہ مسجد سہلہ کی زیارت کرنے اوراس میں نمازپڑھنے کی ترغیب دلائی ہے۔ شیخ طوسی اپنی کتاب میں لکھتے ہیں: مسجد کے علاوہ اپنی روازنہ کی نمازوں کو پڑھنا مناسب نہیں ہے جس طرح کہ ایک شخص مسجد سہلہ کے پاس سے گزرے اوروہ اس میں نمازپڑھے  اور مستحب یہ ہے کہ نمازمغرب اورعشاء کے درمیان اس مسجد میں جائے۔(۴)

عظیم محقق آیت اللہ شیخ آقا بزرگ تہرانی کے حالات زندگی میں آیا ہے کہ آپ چالیس دن  ہرشب بدھ کو نجف اشرف  سے مسجد سہلہ تک پیدل چل کرجایا کرتے تھے۔(۵)

روایت میں نقل ہے کہ جو شخص چالیس دن ہرشب بدھ کو پے درپےمسجد سہلہ میں امام زمانہ علیہ السلام سے ملاقات کی نیت سےجائے اوروہاں جاکرعبادت اورمناجات میں مشغول ہوجائے تو اسے امام زمانہ علیہ السلام کی زیارت کی توفیق نصیب ہوتی ہے۔(۶)

لیکن سوال یہ ہے کہ دیگرشب بدھ کو دیگرراتوں پرکیا فضیلت حاصل ہے کہ اکثرعلماء شب بدھ کو مسجد سہلہ اورمسجد جمکران میں جایا کرتے تھے اورامام زمانہ علیہ السلام کی زیارت سے شرفیاب ہوا کرتے تھے؟

 مسجد سہلہ کے بارے میں مختصرجواب یہ ہے کہ اگرچہ مشہوریہ ہے کہ شیعہ ہرشب بدھ کو اس مسجد میں جاتے ہیں تاہم اس بارے میں ہمارے پاس کوئی واضح روایت موجود نہیں ہے ۔ البتہ سید ابن طاوس نے اس طرح تاکید کی ہےکہ اگرآپ مسجدسہلہ میں جانا چاہتے ہیں تو بہتریہ ہے کہ شب بدھ کو نمازمغرب اورعشاء کےدرمیان میں جائیں کیونکہ یہ رات دیگرراتوں پرفضیلت رکھتی ہے۔ (۷) یہاں پرایک قوی احتمال موجود ہےکہ اس عظیم عالم دین نے شب بدھ کو مسجد سہلہ کی زیارت کرنے کے بارے میں کسی روایت سے استفاد ہ کیا ہوکہ جو اس وقت ہمارے پاس موجود نہیں ہے۔

لیکن مسجد جمکران کے بارے میں کہنا چاہیے کہ کیونکہ یہ مسجد بھی حضرت ولی عصرعلیہ السلام سے منسوب ہے اورمسجد سہلہ سے مشابہت رکھتی ہے لہذا شیعہ اس کو اہمیت دیتے ہیں۔ شاید سید بن طاووس نے جو شب بدھ کی فضیلت کے بارے میں بتایا ہے اسی کو دلیل بنا پرشیعہ ہرشب بدھ کو  اس مسجدمیں بھی جاتے ہیں۔

البتہ دوسری دلیل یہ دی جاسکتی ہے کہ امام زمانہ علیہ السلام نے حسن بن مثلہ جمکرانی کو حکم دیا تھا کہ وہ جعفرکاشانی کے ریوڑسے ایک بکرا خرید کراس مکان پرلےکرآئے اورکل رات یعنی(شب بدھ ) کو یہاں پرذبح کرے اورپھربدھ کے دن اس کا گوشت  بیماروں کے درمیان تقسیم کرے تواللہ تعالیٰ انہیں شفا عطا کرے گا۔ «إنَّ فی قطیع جعفر الکاشانی الرّاعی معزا یجب أن تشتریه فإن أعطاک أهل القریة الثّمن تشتریه و إلاّ فتعطی من مالک و تجی ء به إلی هذا الموضع و تذبحه اللیلة الآتیة ثمّ تنفق یوم الأربعاء الثّامن عشر من شهر رمضان المبارک لحم ذلک المعز علی المرضی و من به علّة شدیدة فإنّ اللّه یشفی جمیعهم...»؛(۸)

شاید شب بدھ اوربدھ کے دن کو امام زمانہ علیہ السلام کی عنایات باعث بنی ہیں کہ لوگ اس دن اس مسجد میں عبادت کے لیے جاتے ہیں۔

۱۔ ابن فقیه، مختصر کتاب البُلدان، ص 174.

۲۔  بحارالانوار، ج 97، ص 434؛ مختصر کتاب البلدان، ص 174.

۳۔  میرزای نوری، مستدرک الوسائل، ج 3، ص 396.

۴۔ شیخ طوسی، مصباح المتهجّد، ص 747.

۵۔ محمّدرضا حکیمی، شیخ آقا بزرگ، ص 7.

۶۔ طباطبایی، مهرتابان، ص 332.

۷۔ ابن طاووس، على بن موسى‏، مصباح الزائر، ص 105، قم، مؤسسه آل البیت(ع)، 1416ق.

۸۔ مجلسى، محمد باقر‏، بحار الأنوار، ج‏ 53، ص 231 - 232، بیروت، دار إحیاء التراث العربی‏، چاپ دوم، 1403ق‏.

*مجله موعود، خردادماه سال 1392، شماره 139 و 140

۷۱۹۴۶۲

 

تبصرے

نام :
ایمیل:(اختیاری)
رائے ٹیکسٹ:
ارسال

تبصرے

سروس کی خبروں کی سرخیاں

8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز

سماجی: اسلامی جمہوریہ ایران کے شہر بندرعباس میں 8ویں بین الاقوامی کانگریس امام سجاد(ع) کا آغاز ہوچکا ہے جس میں دنیا بھر سے مسلمان دانشور، علماء، مفکرین اور عمائدین شرکت کررہے ہیں۔

منتخب خبریں